Saturday , August 19 2017
Home / Top Stories / مودی دور میں ہندوستان ’’فرقہ پرستی کی لیبارٹری‘‘:کنہیا

مودی دور میں ہندوستان ’’فرقہ پرستی کی لیبارٹری‘‘:کنہیا

پونے ۔ /24 اپریل (سیاست ڈاٹ کام)  نریندر مودی حکومت کے پس پردہ آر ایس ایس کی طاقت کارفرما ہے ۔ جے این یو اسٹوڈنٹس لیڈر کنہیا کمار نے کہا کہ موجودہ حکومت نے ملک کو ’’فرقہ پرستی اور مخالف دلت پالیسیوں کی لیبارٹری ‘‘میں تبدیل کردیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ نریندر مودی وزیراعظم ہیں اور آر ایس ایس ان کی طاقت ہے ۔ اُس نے ملک کو لیبارٹری میں تبدیل کردیا۔ انہوں نے کہا کہ ہم سماجی مساوات اور ذات پات کے نظام کے خاتمہ کی بات کرتے ہیں ۔ یہ ہمارے نظریات ہیں اور پھر ہمیں اس بارے میں کچھ کہنے کیلئے خوفزدہ ہونے کی کیا ضرورت ہے ۔ کنہیا کمار کی یہاں آمد کے موقع پر سکیورٹی کے غیرمعمولی انتظامات کئے گئے تھے ۔ چونکہ اس سے پہلے جیٹ ایرویز کے طیارے میں سوار ہوتے وقت ان پر مبینہ طور پر حملہ کیا گیا ۔ کنہیا کمار نے کہا کہ وہ اس طرح کے حملوں سے خوفزدہ ہونے والے نہیں ۔ انہوں نے کہا کہ پولیس غلط بیانی سے کام لے رہی ہے کہ نشست کیلئے یہ جھگڑا ہوا ۔ حالانکہ نشست کیلئے جھگڑا ممبئی کی لوکل ٹرین میں ہوتا ہے طیاروں میں نہیں ۔اس جھگڑے کے باعث کنہیا کمار کو سڑک کے راستے پونے سفر کرنا پڑا۔

کیرالا انتخابات میں ساتھی کامریڈ کی انتخابی مہم میں
صدر جے این ایس یو کنہیا کمار کی شرکت
نئی دہلی ۔24اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) جواہر لال نہرو یونیورسٹی طلبہ یونین کے صدر کنہیا کمار جنہوں نے قبل ازیں مغربی بنگال اور کیرالا کی انتخابی مہم میں شرکت کے امکان کو مسترد کردیا تھا ‘ فیصلہ کرچکے ہیں کہ وہ اپنے ساتھی جے این یو کے کامریڈ کی انتخابی مہم میں کیرالا میں شرکت کریں گے ۔ حالانکہ انہوں نے تہاڑ جیل سے ضمانت پر رہائی حاصل کی ہے ۔ ان پر غدداری کا ایک مقدمہ جاری ہے‘ کیونکہ جواہر لال نہرو یونیورسٹی کے احاطہ میںایک تقریب کے دوران مبینہ طور پر قوم دشمن نعرہ بازی کی گئی تھی ‘ تاہم 29سالہ ریسرچ اسکالر نے کہا کہ انہوں نے فیصلہ کیا ہے کہ محمد محسن سی پی آئی کے امیدوار کی انتخابی مہم میں شرکت کریں گے ۔ محسن پٹامبی غربی پالکڑ سے امیدوار ہیں ۔ وہ جواہر لال نہرو یونیورسٹی کے اسکول برائے سماجی سائنس کے طالب علم ہیں اور جلد ہی اپنی پی ایچ ڈی مکمل کرلیں گے ۔ وہ جے این یو کی شاخ کے اے آئی ایس ایف کے نائب صدر بھی ہیں ۔ سی پی آئی کے طلبہ شعبہ کے نائب صدر ہیں ۔ محسن ان افراد میں شامل ہیں جنہوں نے کنہیا کی رہائی کیلئے مہم چلائی تھی ۔

کنہیا مخالف قوم نہیں :شیوسینا
ناسک ۔ /24 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی حلیف شیوسینا نے آج جے این یو اسٹوڈنٹس لیڈر کنہیا کمار کو ’’مخالف قوم‘‘ قرار دینے اور غداری کا مقدمہ درج کرنے پر مرکز پر شدید تنقید کی ۔ صدر شیوسینا اودھو ٹھاکرے نے کہا کہ کنہیا کمار مخالف قوم نہیں ہے ۔ کنہیا ، ہاردک پٹیل اور روہت ویمولا کیوں ابھرے ؟ حکومت کو اس پر غور کرنا چاہئیے ۔

TOPPOPULARRECENT