Friday , August 18 2017
Home / سیاسیات / مودی پر میرے کسی بھی تبصرہ سے مسائل پیدا ہوسکتے ہیں : راگھورام راجن

مودی پر میرے کسی بھی تبصرہ سے مسائل پیدا ہوسکتے ہیں : راگھورام راجن

نئی دہلی ۔ 11 اگسٹ ( سیاست ڈاٹ کام ) ریزرو بینک آف انڈیا کے سبکدوش ہونے والے گورنر رگھو رام راجن کا احساس ہے کہ وہ وزیراعظم نریندر مودی پر جو کچھ بھی ریمارک کرینگے اس سے مسئلہ پیدا ہوسکتا ہے ۔ رگھو رام راجن کے کئی موقعوں پر اظہار خیال سے حکومت پر تنقیدیں ہوئی ہیں اور سمجھا جاتا ہے کہ اسی وجہ سے حکومت نے انہیں آر بی آئی میں دوسری معیاد کیلئے مقرر کرنے سے گریز کیا ہے۔ راجن کے آر بی آئی گورنر رہنے کی معیاد میں کئی تنازعات پیدا ہوئے جن میں رواداری پر مباحث ‘ حکومت کے میک ان انڈیا پروگرام وغیرہ پر ریمارکس بھی شامل ہیں۔ ان سے بی بی سی پر ٹی وی انٹرویو میں سوال کیا گیا تھا کہ وہ وزیر اعظم نریندرمودی پر تبصرہ کریں۔ راجن نے کہا کہ وہ سمجھتے ہیں کہ اس سوال کا وہ کوئی جواب نہیںدینگے ۔ جو کچھ بھی وہ جواب دینگے اس سے مسائل پیدا ہوسکتے ہیں اس لئے وہ اس کا جواب دینے سے گریز کرینگے ۔ راجن شکاگو یونیورسٹی میں فینانس کے پروفیسر ہیں اور رخصت پر ہیں۔ وہ 4 ستمبر کو گورنر آر بی آئی کی حیثیت سے سبکدوشی کے بعد دوبارہ تعلیم سے جر جائیں گے ۔ تعلیم سے وابستہ ہوجانے ان کے فیصلے کے بعد یہ خیال ظاہر کیا جا رہا ہے کہ ان کی عوامی تقاریر بھی ایک ایسا پہلو ہے جس کی وجہ سے حکومت نے انہیں دوسری معیاد کیلئے آر بی آئی میں متعین نہیں کیا ہے ۔ آئی ایم ایف کے سابق چیف اکنامسٹ رگھو رام راجن نے سیاست میں داخلہ کا امکان بھی مسترد کردیا ۔ انہوں نے کہا کہ وہ سمجھتے ہیں کہ یہ ایک ایسا مقام جہاں ان کی شریک حیات ہر ایک پر غلبہ رکھتی ہیں اور سیاست میں داخلہ پر ان کا جواب ہمیشہ ہی نہیں رہتا ہے ۔

بی جے پی میں کانگریس، بی ایس پی، ایس پی کے ارکان اسمبلی کی شمولیت
لکھنؤ ۔ 11 اگست (سیاست ڈاٹ کام) اترپردیش میں بی جے پی کو آج اس وقت زبردست طاقت حاصل ہوئی جب کانگریس، بی ایس پی اور ایس پی کے ارکان اسمبلی نے بی جے پی میں شمولیت اختیار کی۔ زعفرانی پارٹی کو آئندہ سال اسمبلی انتخابات میں ان پارٹیوں سے مقابلہ ہوگا ۔ بی جے پی ریاستی یونٹ کے صدر کیشو پرساد موریا نے یہ بات بتائی۔

TOPPOPULARRECENT