Friday , August 18 2017
Home / Top Stories / مودی کیخلاف راہول گاندھی کے ’دلالی‘ ریمارک پر ہنگامہ

مودی کیخلاف راہول گاندھی کے ’دلالی‘ ریمارک پر ہنگامہ

کانگریس کی مدافعت، بی جے پی صدر امیت شاہ برہم، مودی حکومت پر ریمارک کے بعد این سی پی ناراض

نئی دہلی 7 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی کے خلاف راہول گاندھی کے ’’خون کی دلالی‘‘ ریمارک پر آج سیاسی درجہ حرارت میں زبردست اضافہ ہوا۔ بی جے پی صدر امیت شاہ نے راہول گاندھی پر جوابی تنقید کی اور کہاکہ وہ اپنی تمام حدود کو پار کرچکے ہیں اور فوج کی قربانیوں کی ’توہین‘ کررہے ہیں۔ جبکہ کانگریس لیڈر فوجی کارروائی کی حمایت کرنے پر زور دے رہے ہیں لیکن اِس مسئلہ پر سیاسی پروپگنڈہ کی مذمت بھی کررہے ہیں۔ کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی، اروند کجریوال کی تنقیدوں کا بھی نشانہ بنے جو خود بھی ایل او سی پر فوجی سرجیکل اسٹرائیک پر اپنے کئے گئے ریمارکس کے باعث تنقید کا سامنا کررہے ہیں۔ چیف منسٹر دہلی سیاسی پارٹیوں پر زور دے رہے ہیں کہ وہ اپنے اختلافات کو بالائے طاق رکھتے ہوئے وزیراعظم مودی کی حمایت کریں۔ این سی پی نے بھی مودی حکومت کے خلاف راہول گاندھی کے ریمارکس پر ناراضگی ظاہر کی۔ راہول گاندھی نے کہا تھا کہ سپاہیوں نے جو خون بہایا ہے اُس پر مودی حکومت ’’دلالی‘‘ کررہی ہے۔ صدر بی جے پی امیت شاہ نے کہاکہ خون کی دلالی سے متعلق ریمارکس کرتے ہوئے راہول گاندھی نے تمام حدود کو پھلانگ دیا ہے۔ مجھے بہت دُکھ ہوا کہ اُنھوں نے اِس طرح کے سخت ترین الفاظ استعمال کئے جو ہمارے بہادر سپاہیوں کے علاوہ ہندوستان کے 125 کروڑ عوام کی توہین ہے۔

اُنھوں نے کہاکہ جن لوگوں کو سرجیکل اسٹرائیک کی صداقت پر شبہ ہے وہ دراصل مخالف ہند قائدین ہیں۔ پورا ملک، بی جے پی اور اس کی حکومت فوج کی حمایت کرتی ہے۔ ہمیں قوم دشمن قائدین کے تبصروں کی پرواہ نہیں ہے۔ ہم اپنی فوج پر کامل یقین رکھتے ہیں اور فوج کی گولیاں ہی ہماری محافظ ہیں۔ اپنی جوابی پے در پے تنقیدوں کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے راہول گاندھی نے پھر ایک بار وزیراعظم نریندر مودی کو نشانہ بنایا۔ اُنھوں نے کہاکہ مجھے فوجی کارروائی پر کوئی اعتراض نہیں ہے۔ میں واضح طور پر فوجی کارروائی کی حمایت کرتا ہوں لیکن فوج کی جانب سے بہائے گئے خون پر جو ’’دلالی‘‘ کی جارہی ہے اُس پر مجھے اعتراض ہے۔

میں سرجیکل اسٹرائیک کی مکمل تائید کرتا ہوں، میں نے جو کچھ کہا وہ واضح ہے۔ لیکن میں سیاسی پوسٹرس پر ہندوستانی فوج کے استعمال کی حمایت نہیں کروں گا۔ نائب صدر کانگریس نے کل بھی وزیراعظم مودی پر تنقید کرتے ہوئے الزام عائد کیا تھا کہ وہ سپاہیوں کے خون کے پیچھے روپوشی اختیار کررہے ہیں اور سپاہیوں کی قربانیوں کا سیاسی استحصال کرتے جارہے ہیں۔ راہول گاندھی نے کہاکہ ’’جنھوں نے ہندوستان کے لئے سرجیکل اسٹرائیک کیا ہے اُن کے خون کے پیچھے آپ چھپے ہیں، اُن کی آپ دلالی کررہے ہو، یہ بالکل غلط ہے (آپ مودی) جموں و کشمیر میں سپاہیوں کے خون کے پیچھے چھپ رہے ہیں۔ جن لوگوں نے ہندوستان کے لئے سرجیکل اسٹرائیک کیا ہے اُن کی قربانیوں کا آپ استحصال کررہے ہیں جو بہت ہی غلط بات ہے‘‘۔ اس کے جواب میں امیت شاہ نے زور دے کر کہاکہ سرجیکل اسٹرائیک کو سیاسی رنگ نہیں دیا جانا چاہئے۔ راہول گاندھی کے بیان کی مدافعت کرتے ہوئے کانگریس نے کہاکہ اُنھوں (راہول) نے جو کچھ کہا درست کہا ہے۔ کانگریس سینئر لیڈر کپل سبل نے کہاکہ پارٹی کے نائب صدر نے وزیراعظم کی ستائش بھی کی تھی جب اُنھوں نے کہا تھا کہ ’’مودی بالآخر سچے وزیراعظم ہونے کا ثبوت دیا ہے‘‘۔

TOPPOPULARRECENT