Saturday , June 24 2017
Home / Top Stories / مودی کی حکومت میں عوام خوفزدہ اور معیشت تباہ

مودی کی حکومت میں عوام خوفزدہ اور معیشت تباہ

NEW DELHI, JAN 11 (UNI):-(L-R) Senior Congress leaders Kamal Nath, A K Antony,former Prime Minister Manmohan Singh, Congress Vice President Rahul Gandhi at 'Jan Vedna Sammelan' in New Delhi on Wednesday. UNI PHOTO-35u

میڈیا بھی زد میں ، ریزرو بینک، الیکشن کمیشن اور عدلیہ کا وقار متاثر : راہول

نئی دہلی ۔ 11 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) ملک کی پانچ ریاستوں میں اسمبلی انتخابات کیلئے پارٹی کی تیاریوں کا عملاً آغاز کرتے ہوئے راہول گاندھی نے آج وزیراعظم نریندر مودی کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا اور عوام میں خوف پیدا کرنے کے علاوہ نوٹ بندی کے ذریعہ معیشت کو تباہ کرنے کا الزام عائد کیا۔ انہوں نے اس یقین کا اظہار کیا کہ 2019ء میں بی جے پی کو اقتدار سے بیدخل کیا جائے گا۔ نوٹ بندی کے پس منظر میں کانگریس کا آج ایک روزہ طویل قومی کنونشن منعقد کیا گیا جس میں پارٹی کے سینئر قائدین بشمول سابق وزیراعظم منموہن سنگھ اور سابق وزیرفینانس پی چدمبرم نے مودی کے اس اقدام کو انتہائی غلط قرار دیا۔ منموہن سنگھ نے عوام کو خبردار کیا کہ ’’بدترین وقت ابھی نہیں آیا‘‘ (خبر صفحہ 3 پر)۔ کانگریس نائب صدر راہول گاندھی نے وزیراعظم کو مختلف اداروں جیسے ریزرو بینک، الیکشن کمیشن اور عدلیہ کی اہمیت کو گھٹانے کیلئے موردالزام قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ حکمراں جماعت نے میڈیا میں بھی خوف پیدا کر رکھا ہے جس کی وجہ سے وہ اپنی ذمہ داری مؤثر طور پر ادا نہیں کرپا رہا ہے۔ اس کنونشن میں کانگریس ورکنگ کمیٹی کے ارکان، کانگریس چیف منسٹرس اور پارٹی کے سینئر قائدین وغیرہ شریک تھے۔ کانگریس نے نوٹ بندی کے خلاف دوسرے مرحلہ کے احتجاج کے طور پر 18 جنوری کو ملک بھر میں تمام آر بی آئی دفاتر کے گھیراؤ کا اعلان کیا۔ راہول گاندھی آج جارحانہ موڈ میں نظر آئے۔ چند دن قبل مودی نے ان کا مذاق اڑایا تھا لیکن آج راہول نے مودی کو نشانہ بناتے ہوئے ان کے مشہور لفظ ’’مترو‘‘ کا حوالہ دیا اور کہا کہ وزیراعظم نے ہمیشہ عوام میں خوف پیدا کرنے کی کوشش کی ہے۔ اگر بی جے پی کی پالیسیوں پر نظر ڈالی جائے تو ان کا مقصد ملک کے عوام میں خوف پیدا کرنا ہے۔ کبھی دہشت گردی، کبھی ماوسٹ اور نوٹ بندی کا خوف پیدا کیا جارہا ہے۔ میڈیا کو دھمکایا جارہا ہے۔ انہوں نے بالی ووڈ کی مشہور فلم ’’نمک حلال‘‘ کے نغمہ ’’آپ کا تو لگتا ہے……‘‘ کا حوالہ دیتے ہوئے مودی پر برہمی ظاہر کی۔ کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی نے بی جے پی اور آر ایس ایس کے خلاف اپنی سخت تنقیدوں میں مزید شدت پیدا کرتے ہوئے ان دونوں جماعتوں پر عوام میں ڈروخوف کا ماحول پیدا کرنے کا الزام عائد کیا اور دعویٰ کیا کہ کانگریس ہی سنگھ پریوار کے نظریات کو شکست دیتے ہوئے زعفرانی جماعت کو اقتدار سے بیدخل کرے گی۔ راہول نے اس تاثر کا اظہار کیا کہ یہ دراصل دو فلسفوں کے درمیان ٹکراؤ ہے جبکہ ان کی پارٹی (کانگریس) کا فلسفہ عوام کو بے خوف رہنے کی ترغیب دیتا ہے لیکن بی جے پی کا فلسفہ عوام میں ڈر اور خوف کا ماحول ہے۔ راہول نے مزید کہا کہ ’’یہ دو فلسفوں کی لڑائی ہے۔ یہ کوئی نئی لڑائی نہیں ہے۔ قدیم لڑائی ہے۔ کانگریس کا فلسفہ کہتا ہیکہ خوفزدہ نہ ہوں۔ دوسرا فلسفہ کہتا ہیکہ ان (عوام) میں ڈرخوف اور ہراسانی پیدا کی جائے‘‘۔راہول گاندھی نے مزید کہا کہ ’’یہ لوگ (بی جے پی اور آر ایس ایس) سمجھتے ہیں کہ وہ عوام میں ڈرخوف پھیلاتے ہوئے حکمرانی کرسکیں گے لیکن کانگریس پارٹی انہیں شکست دے گی اور اقتدار سے بیدخل کرے گی۔ ہم ان (آر ایس ایس۔ بی جے پی) سے نفرت نہیں کرتے لیکن ہم ان کے نظریات کو شکست دیں گے‘‘۔ راہول نے کہا کہ ہندوستان ایک طاقتور ملک ہے اور اس کے عوام دنیا میں کسی سے نہیں ڈرتے۔

 

’آپ کا تو لگتا ہے بس یہی سپنا‘
نئی دہلی ۔ 11 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی نے وزیراعظم نریندر مودی پر طنز کرنے کیلئے آج ہندی فلم ’’نمک ہلال‘‘ کے گیت کا حوالہ دیا اور بالواسطہ طور پر کہا کہ
’’آپ کا تو لگتا ہے بس یہی سپنا
رام رام جپنا پرایا مال اپنا‘‘
مودی پر تنقید کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کارپوریٹس سے رشوت لینے کے الزام کا وزیراعظم کوئی جواب  نہیں دیتے۔ راہول نے اپنی پارٹی کے تمام قائدین اور ورکرس کو ہدایت کی کہ وہ ملک کے کونے کونے میں پہنچ جائیں اور عوام کو اس بات سے واقف کروائیں کہ بی جے پی اور آر ایس ایس کس طرح ملک کو نقصان پہنچا رہے ہیں۔ نوٹ بندی جیسے اقدامات کے ذریعہ خوف اور نفرت پھیلائی جارہی ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT