Monday , August 21 2017
Home / شہر کی خبریں / موسیٰ ندی کی صفائی و نئی صورت گری کے لیے حمڈا کا پراجکٹ

موسیٰ ندی کی صفائی و نئی صورت گری کے لیے حمڈا کا پراجکٹ

حیدرآباد ۔ 8 ۔ اگست : ( سیاست ڈاٹ کام ) : کوڑاکرکٹ ، گندگی و غلاظت سے بری طرح آلودہ موسیٰ ندی اور اس کے اطراف کے علاقوں کی صفائی و نئی صورت گری کے لیے حیدرآباد میٹرو ڈیولپمنٹ اتھاریٹی ( حمڈا ) نے 740 کروڑ روپئے کی تخمینی لاگت سے موسیٰ ندی کے تحفظ کا ایک پر عزم پراجکٹ شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ عثمان ساگر اور حمایت ساگر تا باپو گھاٹ ( 21 کیلو میٹر پٹی ) اور ناگول تا گوریلی ( 15 کیلو میٹر پٹی ) پر اس ندی اور ساحل کی صفائی کے لیے ایک تفصیلی ترقیاتی پراجکٹ رپورٹ تیار کی جاچکی ہے ۔ حمڈا کی تجاویز ، فنڈز کی فراہمی کے لیے دریاؤں کے تحفظ کے قومی ڈائرکٹریٹ کو روانہ کی جائیں گی ۔ یہ ڈائرکٹریٹ تخمینی لاگت کا 70 فیصد فراہم کرتا ہے ماباقی 30 فیصد فنڈز ریاستی حکومت اور حمڈا کی طرف سے برداشت کئے جاتے ہیں ۔ 16 کیلو میٹر علاقہ کے مصارف جی ایچ ایم سی برداشت کرے گی کیو ںکہ یہ علاقہ حمڈا کے حدود میں نہیں ہے ۔ حمڈا کے اس پر عزم پراجکٹ میں موسیٰ ندی کے کناروں پر چہل قدمی ، جاگنگ ، سائیکلنگ ، ٹریکس فٹ اوور پلوں کی تعمیر ، ندی میں کشتی رانی اور دونوں کناروں کو سبزہ زار کی تجاویز بھی شامل ہیں ۔ حمڈا کے ایک سینئیر انجینئر نے کہا کہ ’’ 430 ایکڑ سرکاری اراضیات پر مختلف پارکس کی تعمیر کا منصوبہ ہے ۔ موسیٰ ندی کو ناجائز قبضوں سے محفوظ رکھنے اور سیلاب سے بچنے کے لیے دیواریں تعمیر کی جائیں گی ۔ موسی ندی کے کناروں پر سڑکوں کی تعمیر کے علاوہ ربر ڈیم کی تعمیر کا منصوبہ بھی زیر غور ہے ۔ حکومت تلنگانہ کی جانب سے یہ رپورٹ اورخر اگست میں مرکزی ادارہ سے رجوع کی جائے گی ۔ اور اس پر غور و توثیق کے لیے 45 دن درکار ہوں گے ۔ چنانچہ توقع ہے کہ نومبر سے پراجکٹ پر عمل آوری کا آغاز ہوگا ۔۔

TOPPOPULARRECENT