Monday , August 21 2017
Home / Top Stories / موصل میں عراقی فوج کی زبردست مزاحمت

موصل میں عراقی فوج کی زبردست مزاحمت

رقہ کودولت اسلامیہ کے قبضہ سے آزاد کروانے کی مہم کا آغاز ‘30ہزارکرد‘ عرب ‘ترکمان شامل
موصل ۔6 نومبر ( سیاست ڈاٹ کام) عراق کی فوج موصل میں آج مسلسل تیسرے دن جہادیوں سے خوفناک جنگ کررہی ہے ۔ حالانکہ اس نے بموں اور نشان بازوں سے بچنے کی کوششیں کر کے فوج کے جانی نقصان کو کم سے کم یقینی بنایا ہے ۔ دولت اسلامیہ شہر کے دفاع کیلئے شدید مزاحمت کررہا ہے جس پر اُس نے دو سال قبل قبضہ کیا تھا ۔ اعلیٰ سطحی انسداد دہشت گردی خدمت مشرقی محاذ پر گذشتہ تین ہفتہ سے جاری جارحانہ حملے کی مدافعت کررہا ہے ۔ عراق کی وسیع ترین فوجی کارروائی ہنوز جاری ہے ۔ لیفٹننٹ جنرل عبدالغنی الاسدی نے کہا کہ ہماری فوجیں پڑوس بشمول السماہ ‘ کرکوکلی ‘ الملائین اور شقاق الخضریٰ نے کہا کہ ہماری فوجیں ان تمام علاقوں سے جہادیوں کو نکال باہر کررہی ہیں ۔ جہادیوں نے اپنے بعض مستحکم گڑھ عراق اور شام کی فوج کے حوالے کردیئے ہیں لیکن عراق کے اپنے آخری مستحکم گڑھ کا برہمی کے عالم میں دفاع کررہے ہیں ۔ اسدی نے کہا کہ مزاحمت زبردست ہے اور ہمیں بہت زیادہ نقصان ہورہا ہے ۔ سب سے پہلے موصل میں عراقی فوج جمعہ کے دن داخل ہوئی تھی لیکن اُسے انتہائی سخت مزاحمت کا دولت اسلامیہ کے جہادیوں کی جانب سے سامنا کرنا پڑا ۔ بعض شہری شہر سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے ۔

امریکی زیرقیادت اتحادی طیاروں نے اس علاقہ پر بمباری کی تھی ۔ عین عیسیٰ سے موصولہ اطلاع کے بموجب امریکی تائید سے پُراور عرب جنگجوؤں کے اتحاد نے آج کہا کہ اس نے دولت اسلامیہ کے شام میں مستحکم گڑھ رقہ پر حکومت کا قبضہ بحال کرنے کیلئے کارروائی کا آغاز کردیا ہے جس کا گذشتہ ایک ماہ سے انتظار کیا جارہا تھا ۔ رقہ کو دولت اسلامیہ سے نجات دلوانے کی کارروائی کا آغاز ہوچکا ہے جہاں شیخ احمد شامی جمہوری افواج کے ترجمان نے ایک پریس کانفرنس میں عین عیسیٰ میں اس کا انکشاف کیا ۔ انہوں نے کہا کہ اس کارروائی کا نام ’’ فرات کی برہمی ‘‘ رکھا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جنگ میں 30ہزار جنگجو شامل ہیں اور حملے کا کل رات آغاز کردیا گیا ہے ۔ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ رقہ کو اس کے سپوت عرب اور کُرد ‘ ترکمان گروہ ‘ شامی جمہوری فوج کے پرچم تلے دولت اسلامیہ کے ظلم اور جبر سے نجات دلوائیں گے ۔ انہوں نے عوامی محافظ تنظیموں سے اس کا رروائی میں سرگرم حصہ لینے کی خواہش کی ہے ۔

عراق میں بم دھماکہ ‘ کم از کم 25 افراد ہلاک
موصل ۔ 6نومبر ( سیاست ڈاٹ کام ) صوبائی حکومت کے ترجمان نے کہا کہ ایک خودکش بم حملہ فوجی چوکی پر بغداد کے شمال میں کیا گیا جس سے کم از کم 25 افراد ہلاک ہوگئے ۔ ترجمان کے بموجب صوبہ صلاح الدین میں خودکش بم بردار نے دھماکو مادوں سے بھری ہوئی کار آج صبح مصروف اوقات میں اہم فوجی چوکی سے جنوبی باب الداخلہ پر ٹکرا دی ۔ ترجمان علی الحمدانی نے بموجب پانچ طالبات ایک خاتون اور ایک ملازم پولیس ہلاک ہوگئے ۔ انہوں نے کہا کہ دیگر 25 افراد زخمی ہوگئے ۔ الحمدانی نے کہا کہ کسی بھی گروپ نے تاحال اس حملہ کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے ۔ دولت اسلامیہ کے عسکریت پسند اکثر ایسے حملے کیا کرتے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT