Thursday , August 24 2017
Home / شہر کی خبریں / مولانا ابوالکلام آزاد، ہندوستان کے جدید تعلیمی نظام کے ’’بانی‘‘

مولانا ابوالکلام آزاد، ہندوستان کے جدید تعلیمی نظام کے ’’بانی‘‘

اُردو یونیورسٹی کی یوم آزاد تقاریب میں جسٹس سبھاشن ریڈی اور ڈاکٹر اسلم پرویز کے خطاب
حیدرآباد، 4؍نومبر (پریس نوٹ) مولانا ابوالکلام آزاد ایک ہمہ پہلو شخصیت کے ساتھ ساتھ ہندوستان میں جدید تعلیمی نظام کے ’’بانی‘‘ بھی ہیں۔ ان کی زندگی، شخصیت او ر نظریات ساری انسانیت کے لیے مشعل راہ ہیں۔ ان خیالات کا اظہار جسٹس بی سبھاشن ریڈی، لوک آیوکت، تلنگانہ و آندھرا پردیش نے آج مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی کے زیر اہتمام یوم آزاد تقاریب کی افتتاحی تقریب سے بحیثیت مہمانِ خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا۔ مانو ماڈل اسکول، فلک نما، حیدرآباد میں منعقدہ رنگا رنگ تقریب کی صدارت ڈاکٹر محمد اسلم پرویز، وائس چانسلر نے کی۔ ڈاکٹر محمد اسلم پرویز، وائس چانسلر نے اپنی صدارتی تقریر میں ماڈل اسکول کے بچوں کے رنگا رنگ ثقافتی پروگرام کی زبردست ستائش کی اور کہا کہ ہمارے طلبہ میں صلاحیتوں کی بہتات ہے، لیکن مواقع کی کمی ہے۔ مولانا ابوالکلام آزاد کو خراج پیش کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ مولانا اس اعتبار سے انفرادی شخصیت کے مالک ہیں کہ وہ دین و دنیا دونوں میں کامیاب تھے۔ ایک طرف انہیں ملک کا پہلا وزیر تعلیم بننے کا اعزاز حاصل ہے تو دوسری طرف انہوں نے ترجمان القرآن جیسی تفسیر بھی لکھی۔ مولانا آزاد چونکہ قرآن کو سمجھتے تھے اسی لیے دین و دنیا میں کامیاب رہے۔ ڈاکٹر اسلم پرویز نے بچوں اور نوجوانوں کو مشورہ دیا کہ وہ اگر مولانا آزاد بننا چاہتے ہیں تو اس کے لیے پہلی سیڑھی قرآن فہمی ہے۔ افتتاحی تقریب میں پروفیسر کے آر اقبال احمد، پروفیسر ایس ایم رحمت اللہ، پروفیسر صدیقی محمد محمود، پروفیسر نسیم الدین فریس، پروفیسر گلفشاں حبیب، جناب میر ایوب علی خان، کنوینر کے علاوہ پروفیسر حبیب گھٹالہ، ڈاکٹر ضیا الدین نیر اور دیگر معززین نے شرکت کی۔

TOPPOPULARRECENT