Monday , August 21 2017
Home / اضلاع کی خبریں / مولانا آزاد ،ہندو مسلم اتحاد کے علمبردار

مولانا آزاد ،ہندو مسلم اتحاد کے علمبردار

سدی پیٹ 13 نومبر (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) مولانا ابوالکلام آزاد کی یوم پیدائش 11 نومبر کو پریس کلب سدی پیٹ میں مسلم ایمپلائز ویلفیر اسوسی ایشن (میوا) سدی پیٹ کی جانب سے صدر میوا جناب فخرالدین کی صدارت میں جلسہ منعقد ہوا جس میں مہمان خصوصی کی حیثیت سے الحاج عبدالقادر صدر ملت اسلامہ اور پربھو داس ایم ای او، سریندر ریڈی، بھوپت ریڈی، غوث محی الدین، علیم الدین سرور نے اعزازی مہمانوں کی حیثیت سے شرکت کی۔ اس موقع پر جناب عبدالقادر نے خطاب کرتے ہوئے مجاہد آزادی و مفسر قرآن مولانا آزاد ملک کے پہلے وزیر تعلیم تھے جنھوں نے ملک میں تعلیم کو عام کرنے کا خواب دیکھا تھا۔ جسے شرمندہ تعبیر کرنے کے لئے حکومت تلنگانہ جو اقدامات کررہی ہے وہ قابل ستائش ہے۔ انھوں نے کہاکہ مولانا آزاد مجاہد آزادی تھے، انھوں نے ملک کی جدوجہد آزادی میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا۔ وہ الہلال کے ایڈیٹر تھے اور کئی مرتبہ جیل بھی گئے۔ مولانا آزاد ہندو مسلم اتحاد کے علمبردار تھے۔ آپ ایک بڑے عظیم رہنما، مجاہد آزادی، ماہر تعلیم اور عالم دین تھے۔ مولانا نے جو تعلیمی نصاب تیار کیا وہ کسی نے بھی نہیں کیا۔ خاص طور پر مسلمانوں کی تعلیمی، معاشی، مذہبی پسماندگی کو دور کرنے کے لئے کوشاں رہتے تھے۔ موجودہ تعلیمی ترقی ملک بھر میں دیکھی جارہی ہے جوکہ انھیں کی دین ہے۔ مولانا کی خدمات کو ہم فراموش نہیں کرسکتے۔ جناب فخرالدین نے اپنی صدارتی تقریر میں مولانا کی خدمات پر تفصیلی روشنی ڈالی۔ جلسہ کی کارروائی محمد یوسف نے چلائی۔ جلسہ کو عزیز، سعادت علی، عثمان، غوث محی الدین ، علیم سرور نے بھی مخاطب کیا۔

TOPPOPULARRECENT