Tuesday , August 22 2017
Home / شہر کی خبریں / مکانات کے روبرو پارک کی جانے والی گاڑیوں سے پارکنگ فیس

مکانات کے روبرو پارک کی جانے والی گاڑیوں سے پارکنگ فیس

ٹریفک اور پارکنگ مسئلہ سے نمٹنے حکومت کی منصوبہ بندی
حیدرآباد ۔ 17 ۔ فروری : ( سیاست نیوز) : کیا آپ کے گھروں میں پارکنگ کے لیے جگہ نہیں ہے ؟ اور گاڑیاں گھروں کے باہر پارک کرتے ہیں تو ہوشیار ہوجائیے کیوں کہ حکومت نے گھروں کے سامنے پارک کرنے والی گاڑیوں سے فیس وصول کرنے کی تیاریاں شروع کردی ہے ۔ اس کا جائزہ لینے اور فیس کا تعین کرنے کے لیے اعلیٰ عہدیداروں پر ایک سب کمیٹی تشکیل دے دی گئی ہے ۔ گریٹر حیدرآباد میں آبادی کے ساتھ ساتھ گاڑیوںکی تعداد میں بھی بے تحاشہ اضافہ ہورہا ہے ۔ سڑکوں کی توسیع نہ ہونے سے ایک طرف جہاں ٹریفک مسائل پیدا ہورہے ہیں وہیں گھروں میں پارکنگ کی سہولت نہ ہونے کی وجہ سے گاڑیاں گھروں کے سامنے پارک کی جارہی ہے ۔ جس سے بستیوں ، کالونیوں میں بھی ٹریفک مسائل پیدا ہورہے ہیں ۔ حکومت نے کافی سنجیدگی سے اس کا جائزہ لینے کے بعد گھروں کے باہر پارک کی جانے والی گاڑیوں سے فیس وصول کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ حکومت کے اس اقدام سے یا تو گاڑی اونرس اپنی گاڑیوں کو گھروں میں پارک کریں گے یا پھر پارکنگ لاٹس پر اپنی گاڑیاں پارک کریں گے یا پھر حکومت کو پارکنگ فیس ادا کریں گے ۔ محکمہ بلدی نظم نے اس کا جائزہ لینے کے لیے مختلف شعبوں کے اعلیٰ عہدیداروں پر ایک سب کمیٹی تشکیل دیتے ہوئے انہیں پارکنگ کے رہنمایانہ اصول کے ساتھ ساتھ گھروں کے سامنے پارک کی جانے والی گاڑیوں سے وصول کیے جانے والے فیس کا تعین کرنے کی بھی ہدایت دی ہے سب کمیٹی سے رپورٹ وصول ہونے کے بعد اس پر عمل آوری کا آغاز ہوجائے گا ۔ گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے ایک عہدیدار نے بتایا کہ اس اسکیم پر ممبئی میں عمل آوری ہورہی ہے جس کے حوصلہ افزاء نتائج برآمد ہورہے ہیں ۔ انہوں نے بتایا کہ حکومت اہم علاقوں بالخصوص ٹریفک کا بہاؤ زیادہ رہنے والے علاقوں میں ہمہ منزلہ عمارتیں تعمیر کرتے ہوئے وہاں پارکنگ کی سہولتیں فراہم کرنے کا سنجیدگی سے جائزہ لے رہی ہے ۔ مالکان مکانات کی جانب سے پارکنگ کی سہولت فراہم کرنے کا حکومت کو پیشکش کیا جاتا ہے تو حکومت انہیں مختلف رعایتیں اور سہولتیں فراہم کرنے پر غور کررہی ہے ۔ گھروں کے باہر گاڑیاں پارک کرنے والوں سے جب اس سلسلے میں بات کی گئی تو انہوں نے بتایا کہ جب گھروں کے سامنے گاڑیاں پارک کرنے پر فیس وصول کی جارہی ہے تو حکومت پر یہ بھی ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ گاڑیوں کے نقصانات پر اس کی پابجائی کرنے کے لیے تیار رہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT