Wednesday , September 20 2017
Home / ہندوستان / مکوکا عدالت میں کرنل پروہت کی ضمانت پر رہائی کی مخالفت

مکوکا عدالت میں کرنل پروہت کی ضمانت پر رہائی کی مخالفت

مالیگاؤں دھماکہ میں شہید نوجوان کے والد کے اعتراضات پر سماعت کے بعد فیصلہ محفوظ
ممبئی۔ 10اگست (سیاست ڈاٹ کام)ممبئی کی خصوصی مکوکا عدالت نے آج یہاں مالیگاؤں 2008 بم دھماکہ معاملے کے کلیدی ملزم کرنل شریکانت پروہیت کی جانب سے داخل کی گئی ضمانت عرضداشت کی جمعیۃ علماء مہاراشٹر (ارشد مدنی) کی جانب سے مخالفت کرنے والی ”مداخلت کار” کی عرضداشت پر سماعت عمل میں آئی جس کے دوران ایڈوکیٹ شریف شیخ نے عدالت کو بتایا کہ مداخلت کار نثار احمد سید بلال کا جواں سال فرزند اظہر اس حادثہ میں جگہ پر ہی شہید ہوگیا تھا اور یہ انصاف کا تقاضہ ہے کہ ملزم کی ضمانت عرضداشت کی سماعت کے دوران اسے بھی اس تعلق سے اپنے اعتراضات عدالت کے سامنے پیش کرنے کا موقع دیا جائے ۔ایڈوکیٹ شریف شیخ نے ضمانت عرضداشت پر اپنے موقف کا اظہارکرنے کی اجازت طلب کرتے ہوئے کہا کہ ملزم کرنل پروہیت کو ضمانت پر رہا نہیں کیا جانا چاہئے کیونکہ وہ ایک دہشت گردانہ معاملے میں ملوث ہے اور ان کی ضمانت پر رہائی سے مقدمہ پر اثر پڑھنے کے امکانات ہیں۔

ایڈوکیٹ شریف شیخ نے عدالت کو بتایا گذشتہ دنوں اسی عدالت نے اس معاملے کی دیگر کلیدہ ملزم سادھوی پرگیا سنگھ ٹھاکرکی ضمانت صرف اور صرف مداخلت کار کے اعتراضات کی وجہ سے مسترد کردی تھی لہٰذا ایسے وقت میں جب این آئی اے مبینہ طور پر ملزمین کو فائد پہنچانے کا کام کررہی مداخلت کار کی اہمیت بڑھ جاتی ہے لہذا مداخلت کا ر کوموقع دیا جانا چاہئے ۔اسی درمیان قومی تفتیشی ایجنسی این آئی اے کی نمائندگی کرتے ہوئے ایڈوکیٹ اویناس رسال نے عدالت کو بتایا کہ یہ سچ ہے کہ مالیگاؤں 2008ء بم دھماکہ حادثہ میں مداخلت کا ر کے لڑکے کی موت واقع ہوئی تھی لیکن اب جبکہ ایجنسی نے عدالت کے سامنے کرنل پروہیت کے خلاف موجود تمام ثبوت و شواہد پیش کردیئے ہیں مداخلت کار کو مزید کچھ کہنے کا اختیار دینے کی ضرروت باقی نہیں بچتی ہے لہذا مداخلت کارکی عرضداشت کو عدالت مسترد کردے ۔مداخلت کار کی عرضداشت کی مخالفت آج کرنل پروہیت نے اس کے وکیل ششی کانت شیودے کی غیر موجودگی میں خود کی اور کہا کہ این آئی اے نے اس تعلق سے عدالت میں اس کیخلاف موجود ثبوت و شواہد پیش کردیئے ہیں لہذا مداخلت کار کو اجازت دینا عدالت کے قیمتی وقت کی بربادی ہوگی۔خصوصی جج ایس ڈ ی جج ٹیکاولے نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد اپنا فیصلہ ضمانت عرضداشت پر این آئی اے اور ملزم کے وکلاء کی بحث مکمل ہونے تک محفوظ کرلیا ۔

چائے کے ٹب میں گر کر قیدی فوت
شاھڈول۔10اگست (سیاست ڈاٹ کام) مدھیہ پردیش کے شاھڈول جیل میں چار روز قبل مشکوک حالات میں چائے سے جلے ایک قیدی کی ہسپتال میں علاج کے دوران موت ہو گئی ہے ۔جیلر مدن کملیش نے بتایا کہ قیدی رام بھور 6 اگست کو چائے کے ٹب میں گر کر جل گیا تھا۔ اسے ضلع اسپتال کے ٹراما وارڈ میں داخل کرایا گیا تھا۔ جہاں کل شام اس نے دم توڑ دیا۔

TOPPOPULARRECENT