Thursday , June 22 2017
Home / شہر کی خبریں / مکہ مسجد کی حالت ابتر ، ناقص صفائی ، مصلیوں اور سیاحوں کو تکلیف

مکہ مسجد کی حالت ابتر ، ناقص صفائی ، مصلیوں اور سیاحوں کو تکلیف

وضو خانہ کی جالیاں خطرناک ، دروازے اور دہلیز زنگ آلود ، حکومت کا صرف اعلانات پر اکتفا
حیدرآباد۔18مئی(سیاست نیوز) تاریخی مکہ مسجد کے متعلق ریاستی حکومت کی جانب سے گذشتہ تین برسوں کے دوران کئے گئے کسی بھی اعلان پر عمل آوری نہیں ہوئی ہے بلکہ مکہ مسجد کی حالت گذشتہ تین برسوں کے دوران مزید ابتر ہوتی چلی گئی اور صفائی کے ناقص انتظامات کے سبب بھی مسجد کو بغرض عبادت پہنچنے والے ہوں یا بغرض سیاحت پہنچنے والے ہوں دونوں کو ہی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ تاریخی مکہ مسجد کی چھت کے مرمتی کاموں کی ماہ رمضان المبارک کے آغاز سے قبل تکمیل کا اعلان کیا گیا تھا جبکہ ہر سال یہ اعلان روایات بن چکا ہے لیکن اس کے باوجود اب تک بھی تاریخی مسجد کی چھت کے مرمتی کاموں کا آغاز نہیں ہو پایا ہے ۔ مکہ مسجد کے غسل خانہ اور طہارت خانہ کی حالت انتہائی ابتر ہوتی جا رہی ہے لیکن اس کا کوئی پرسان حال نہیں ہے۔مکہ مسجد کے مرکزی باب الداخلہ سے اندر جانے کے بعد سیدھی جانب موجود وضوخانہ کی جالیوں بالخصوص جالی کے دروازوں کی حالت انتہائی نا گفتہ بہ ہوچکی ہے اور اگر کو ئی شخص عجلت میں اس جالی پر پیر رکھ دے تو اس کا پیر ضائع ہو سکتا ہے ۔لوہے کی جالیوں کے ذریعہ بنائے گئے ان دروازوں کی دہلیز زنگ آلود ہو چکی ہے اور لوہے کے ٹکڑے نکلنے لگے ہیں جو کہ مصلیوں کے پیر زخمی کر سکتے ہیں۔ مصلیوں نے کہا کہ ان جالیوں سے مصلیوں کے پیر زخمی ہو سکتے ہیں ایسا نہیں ہے بلکہ اب تک کئی مصلیوں کے پیر زخمی ہو چکے ہیں اور متعدد مرتبہ توجہ دہانی کے باوجود اختیار کردہ خاموشی سے ایسا محسوس ہوتا ہے کہ تاریخی مکہ مسجد کے مسائل کو حل کرنے سے زیادہ صرف اعلانات اور دوروں کی ضرورت محسوس کی جا رہی ہے ۔ مصلیوں نے اس بات کی بھی شکایت کی کہ مسجد کے صحن میںروزانہ معمول کی صفائی نہ ہونے کے باعث مصلیوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اوراس مسئلہ سے انتظامیہ کو متعدد مرتبہ واقف کروایا جا چکا ہے۔ مسجد کے سرکردہ ذمہ دار نے واضح طور پر کہا کہ موجودہ حکومت کی جانب سے جتنے اعلانات کئے گئے ہیں ان میں کسی ایک اعلان پر بھی بروقت عمل آوری ہیں ہوئی ہے جو کہ افسوسناک ہے۔تاریخی مکہ مسجد کا دورہ کرتے ہوئے تصویر کشی اور من مانی اعلانات تو کئے جا رہے ہیں لیکن ان اعلانات پر عمل آوری کے متعلق کسی بھی عہدیدار میں سنجیدگی نظر نہیں آتی بلکہ بسا اوقات توجہ دہانی کی صورت میں عہدیداروں کی برہمی کا سامنا کرنا پڑ تا ہے اسی لئے اعلی عہدیداروں کو ان مسائل کی جانب توجہ دہانی سے گریز کیا جانے لگا ہے۔ مکہ مسجد کی چھت کے مرمتی کاموں کی ماہ رمضان المبارک کے آغاز سے قبل ختم کرلینے کا اعلان کیا گیا تھا لیکن اس سلسلہ کا ابھی تک آغاز نہیں ہو پایا ہے۔ اس طرح کے اعلانات اور عمل آوری میں ناکامی سے اندازہ کیا جا سکتا ہے کہ حکومت تاریخی مکہ مسجد کے تحفظ کے سلسلہ میں کس حد تک سنجیدہ ہے؟ چھت کے مرمتی کاموں کے عدم آغاز کے متعلق کی جانے والی شکایات کے علاوہ تنخواہوں کے مسائل تک حل نہیں کئے جا رہے ہیں جو کہ افسوس کا مقام ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT