Thursday , October 19 2017
Home / شہر کی خبریں / مکہ مسجد کی مرمت و درستگی اور انیس الغرباء کے کامپلکس کی تعمیر کی سرگرمیوں کا آغاز

مکہ مسجد کی مرمت و درستگی اور انیس الغرباء کے کامپلکس کی تعمیر کی سرگرمیوں کا آغاز

آرکیالوجیکل سروے آف انڈیا اور محکمہ آر اینڈ بی کو بالترتیب ایک ایک کروڑ کے چیکس کی حوالگی، الحاج محمد سلیم کا عہدیداروں کے ساتھ اجلاس
حیدرآباد۔/6مئی، ( سیاست نیوز) تاریخی مکہ مسجد کی چھت کی مرمت اور درستگی کے کاموں کیلئے صدر نشین تلنگانہ وقف بورڈ محمد سلیم نے آرکیالوجیکل سروے آف انڈیا کے حکام کو ایک کروڑ روپئے کا چیک حوالے کیا۔ انہوں نے نامپلی میں انیس الغرباء کے ہمہ منزلہ کامپلکس کی تعمیر کے سلسلہ میں محکمہ آر اینڈ بی کے عہدیداروں کو ایک کروڑ روپئے کا چیک حوالے کیا تاکہ تعمیری سرگرمیوں کا آغاز کیا جاسکے۔ وقف بورڈ میں منعقدہ ایک تقریب میں محمد سلیم نے یہ دو چیکس حوالے کئے اور دونوں محکمہ جات سے اپیل کی کہ مفوضہ کاموں کی جلد از جلد تکمیل کو یقینی بنائیں۔ مکہ مسجد کی چھت کی درستگی اور چھت میں بارش کا پانی اُترنے کو روکنے کا کام آرکیالوجیکل سروے آف انڈیا کے حوالے کیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ مکہ مسجد کے دیگر کاموں کی تکمیل کے سلسلہ میں حکومت نے 8.4کروڑ روپئے مختص کئے ہیں۔ صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم نے بتایا کہ حکومت نے اس تاریخی مسجد کے تحفظ کیلئے درکار فنڈ جاری کیا ہے اور تعمیری و مرمتی کاموں کے ساتھ ساتھ باقی رقم جاری کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ اس رقم کے ذریعہ نہ صرف چھت کا تحفظ ہوگا بلکہ تزئین نو کے کام انجام دیئے جائیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ مکہ مسجد کے حوض کی تعمیر کا کام بھی باقی ہے۔ اس کے علاوہ لاؤڈ اسپیکر، الیکٹرک سسٹم کی تبدیلی اور سی سی ٹی وی کیمروں کی تنصیب عمل میں لائی جائے گی۔ محمد سلیم نے کہا کہ ماہ رمضان المبارک کے پیش نظر آرکیالوجیکل سروے آف انڈیا نے عیدالفطر کے بعد کاموں کے آغاز کا فیصلہ کیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ مصلیوں کو درپیش تکالیف کو پیش نظر رکھتے ہوئے رمضان کے فوری بعد کام کا آغاز کردیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ تاریخی مکہ مسجد کی عظمت رفتہ کی بحالی اور تحفظ حکومت کی اولین ترجیح ہے جبکہ نامپلی میں انیس الغرباء کیلئے حکومت کی جانب سے الاٹ کردہ اراضی پر تعمیری سرگرمیوں کا جلد ہی آغاز ہوگا۔ اندرون ایک ماہ چیف منسٹر کے چندر شیکھرراؤ سنگ بنیاد رکھیں گے۔ انہوں نے کہا کہ آر اینڈ بی حکام پرانی عمارتوں کی انہدامی کارروائی اور اراضی کو مسطح بنانے کیلئے ابتدائی رقم خرچ کریں گے۔ 20 کروڑ روپئے کی لاگت سے ہمہ منزلہ کامپلکس تعمیر کیا جائے گا جس کی آمدنی انیس الغرباء پر خرچ کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے مسلم یتیم و یسیر بچوں کیلئے بہتر سہولتوں کے ساتھ یتیم خانہ قائم کرنے کیلئے آر اینڈ بی کی اراضی حوالے کردی ہے۔ چیکس کی حوالگی کے موقع پر چیف ایکزیکیٹو آفیسر وقف بورڈ ایم اے منان فاروقی اور ڈائرکٹر آرکیالوجیکل سروے آف انڈیا ایم آر وشالکھشی اور دوسرے موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT