Wednesday , August 23 2017
Home / Top Stories / مکہ میں خراب موسم کے درمیان حرم شریف میں سانحہ ، 87 عازمین حج شہید

مکہ میں خراب موسم کے درمیان حرم شریف میں سانحہ ، 87 عازمین حج شہید

دیگر 184 عازمین زخمی ۔کنسٹرکشن کرین گرپڑا۔ شہیدوں میں تین ہندوستانی شامل ۔ 10 ہندوستانیوں بشمول دو حیدرآبادیوں کو زخم آئے ۔ امیر مکہ پرنس خالد مقام سانحہ پہنچ گئے ۔ تحقیقات کا اعلان

ریاض ، 11 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) سعودی عرب کے مقدس شہر مکہ معظمہ میں آج شام خراب موسم کے دوران مسجد الحرام میں دلسوز سانحہ پیش آیا جہاں جاری توسیعی پراجکٹ کے سلسلے میں موجود کنسٹرکشن کرین جمعہ کے پیش نظر کھچاکھچ بھرے حرم میں عازمین حج پر گرپڑا جس کے نتیجے میں کم از کم 87 عازمین شہید اور 184 دیگر زخمی ہوجانے کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔ یہ سانحہ مقامی وقت شام 5:10 بجے پیش آیا۔ امام کعبہ سعود الشریم نے ’ٹوئٹر‘ پر اپنے پیام تعزیت میں جاں بحق ہونے والے عازمین حج کو شہید قرار دیا۔ دریں اثناء امیر مکہ پرنس خالد الفیصل سانحہ کے بعد جلد ہی حرم شریف پہنچ گئے اور پورے معاملے کی تحقیقات کا اعلان کیا۔ انھوں نے کہا کہ سانحہ کے اسباب کا پتہ چلایا جائے گا۔ اس دوران بن لادن گروپ نے حرم شریف کے توسیعی پراجکٹ کو فی الفور موقوف کردینے کا فیصلہ کیا۔ اس پراجکٹ کے سلسلے میں مسجد الحرام کے اطراف متعدد کرین لائے گئے ہیں۔ امیر مکہ پرنس خالد راحت کاری سرگرمیوں کی نگرانی کررہے ہیں۔ سوشل میڈیا پر تیزی سے زیرگشت تصاویر میں دکھایا گیا کہ حرم کے بڑے حصے میں خون میں لت پت نعشیں پڑی ہیں جہاں کرین کا اوپری حصہ گرا دیکھا گیا، جو ظاہر طور پر گرپڑا۔ اس وقت زبردست بارش ہورہی تھی۔ الجزیرہ ٹی وی چیانل کے حسن پٹیل نے مکہ سے رپورٹنگ کرتے ہوئے کہا کہ عینی شاہدین نے انھیں بتایا کہ کرین مسجد حرام کے تیسرے فلور پر گرپڑا۔ معلوم ہوا کہ اس وقت مسجد مکمل بھری تھی، جبکہ یہ سانحہ 6:30 بجے نماز مغرب سے کچھ دیر قبل پیش آیا۔ ہندوستانی قونصل جنرل جی ایس مبارک نے بتایا کہ 10 ہندوستانی زخمی ہوئے ہیں۔ تاہم محمد عبدالحق رکن مرکزی حج کمیٹی ہند کے بموجب شہید عازمین حج میں 3 ہندوستانی شامل ہونے کی توثیق ہوئی ہے جن میں دو کا اترپردیش اور ایک عازم حج کا مغربی بنگال سے تعلق بتایا گیا۔ انھوں نے مزید کہا کہ 9 شدید زخمی ہندوستانیوں میں بہار، یوپی اور مغربی بنگال کے عازمین حج شامل ہیں۔ اسپیشل آفیسر پروفیسر ایس اے شکور نے بتایا کہ حیدرآباد سے تعلق رکھنے والے دو عازمین حج معمولی زخمی ہوئے ۔ محمد حنیف خان و اہلیہ ساکن بازار گھاٹ کا آؤٹ پیشنٹ کی حیثیت سے علاج ہوا ہے۔ ڈاکٹر شکور نے یہ بھی بتایا کہ رات گئے حیدرآباد سے ریاستی حج کمیٹی کا کنٹرول روم بھی کام کرنے لگا ہے۔ اس طرح سرعت سے حرکت میں آنے والی یہ ملک کی پہلی ریاستی حج کمیٹی ہے۔ کنٹرول روم کا نمبر 040-23214125 ہے۔ (سانحہ کی تصاویر صفحہ 3 پر)

TOPPOPULARRECENT