Saturday , August 19 2017
Home / ہندوستان / مہاراشٹرا میں بیف پر پابندی کے خلاف مختلف درخواستیں یکجا

مہاراشٹرا میں بیف پر پابندی کے خلاف مختلف درخواستیں یکجا

ممبئی /7 اگست (سیاست ڈاٹ کام) ممبئی ہائی کورٹ نے مہاراشٹرا میں بیف پر پابندی کو چیلنج کرتے ہوئے داخل کردہ مفاد عامہ کی تمام درخواستوں کو یکجا کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ہائی کورٹ میں ان درخواستوں کی 19 اگست سے مشترکہ سماعت ہوگی۔ جسٹس وی ایم کنڈے کی زیر قیادت ایک بنچ کی ہدایت کے مطابق اس معاملے کی سماعت 19 اگست مقرر کی گئی ہے۔ صدر جمہوریہ پرنب مکرجی کی جانب سے مارچ کے اوائل میں مہاراشٹرا انیمل پریزرویشن ترمیمی بل 2015 کو منظوری دی جانے کے بعد مہاراشٹرا میں بیف پر پابندی عائد کی گئی ہے۔ اس میں بیف کی فروخت اور اس کو اپنے پاس رکھنا بھی جرم قرار دیا گیا ہے۔ ریاست میں گاؤکشی پر پہلے ہی سے پابندی ہے۔ نئے قانون میں بیلوں اور بھینسوں کو بھی ذبح کرنے پر پابندی عائد کی گئی ہے۔ سابق میں ان جانوروں کے ذبیحہ کی اجازت تھی۔ ہائی کورٹ نے بیوپاریوں کے خلاف کوئی کارروائی نہ کرنے کی ہدایت دی ہے۔

TOPPOPULARRECENT