Saturday , August 19 2017
Home / ہندوستان / مہاراشٹرا میں خشک سالی کی سنگین صورتحال

مہاراشٹرا میں خشک سالی کی سنگین صورتحال

لاتور کو ٹرین کے ذریعہ پانی کی سربراہی، حکومت کا ا علان
ممبئی 7 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) آئندہ 15 دن میں ضلع لاتور کیلئے ٹرین کے ذریعہ پانی لایا جائے گا اور پربھنی ٹاؤن میں آبرسانی کے مراکز پر امتناعی احکامات نافذ کردیئے گئے تاکہ کسی بھی ناخوشگوار اور تصادم کے واقعہ کو ٹال دیا جائے۔ مہاراشٹرا کے علاقہ مرہٹواڑہ میں خشک سالی کی سنگین صورتحال نے حکام کو فکرمند کردیا ہے۔ لاتور اور بیڑ جیسے علاقوں میں پانی کی قلت شدت اختیار کرگئی ہے جس کے پیش نظر حکومت نے جیل کے قیدیوں کو دوسرے مقامات پر منتقل کردیا ہے۔ جبکہ اپوزیشن کانگریس ۔ این سی پی نے آج یہ الزام عائد کیا ہے کہ بی جے پی کی زیرقیادت حکومت پانی کے بحران سے نمٹنے میں ناکام ہوگئی ہے۔ دریں اثناء وزیر مالگذاری ایکناتھ کھڈسے نے اسمبلی میں وقفہ صفر کے دوران لاتور میں پانی کی شدید قلت کے مسئلہ پر کہاکہ حکومت نے لاتور کو ٹرین کے ذریعہ پانی سربراہ کرنے کا انتظام کیا ہے اور اس خصوص میں پہلی ٹرین آئندہ 15 دنوں میں لاتور جائے گی۔ خشک سالی سے متاثرہ پربھنی ٹاؤن میں آبرسانی کے مقامات اور واٹر ٹینکس کے قریب 3 مئی تک دفعہ 144 نافذ کردیا گیا اور نظم و ضبط کی برقراری کے لئے ہوم گارڈس کو متعین کیا گیا ہے۔ علاوہ ازیں تھانے شہر میں بھی عوام ، پانی کیلئے ترس رہے ہیں۔ میونسپل کمشنر سنجیو جیسوال نے صورتحال سے نمٹنے کے لئے ہر 10 وارڈس کیلئے ایک نوڈل آفیسر کا تقرر کیا ہے۔ بامبے ہائیکورٹ نے کل ایسے وقت آئی پی ایل کرکٹ میاچس منعقد کرنے کا منصوبہ بنانے پر بی سی سی آئی اور کرکٹ اسوسی ایشن کی سرزنش کی ہے جبکہ ریاست میں پانی کی قلت شدت اختیار کرگئی ہے۔ تاہم وزیر دیویندر کھڈسے نے سابق چیف منسٹر پرتھوی راج چوہان کے اس ادعا کو مسترد کردیا کہ لاتور اور دیگر علاقوں میں آبی بحران کی یکسوئی کے لئے بی جے پی کی زیرقیادت حکومت میں سیاسی عزائم کا فقدان پایا جاتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT