Thursday , August 17 2017
Home / ہندوستان / مہاراشٹرا میں محکمہ داخلہ کا عہدیدار گرفتار

مہاراشٹرا میں محکمہ داخلہ کا عہدیدار گرفتار

پولیس کانسٹبل کے امیدوار سے رشوت حاصل کرنے کا الزام
ممبئی ۔ 19 ۔ مئی : ( سیاست ڈاٹ کام ) : مہاراشٹرا میں محکمہ داخلہ کے ایک عہدیدار کو آج اینٹی کرپشن بیورو نے ایک امیدوار کو پولیس کانسٹبل کی حیثیت سے تقرر کے لیے 5 ہزار روپئے رشوت حاصل کرتے ہوئے گرفتار کرلیا ۔ باوثوق ذرائع نے بتایا کہ محکمہ داخلہ میں ڈپٹی سکریٹری سنجے کھیڈکرسے کو پولیس کانسٹبل کی حیثیت سے ایک امیدوار کے انتخاب کے لیے 5 ہزار روپئے طلب کرنے پر گرفتار کرلیا ۔ اینٹی کرپشن بیورو نے انہیں سکریٹریٹ کے باب الداخلہ کے باہر رنگے ہاتھوں پکڑ لیا ۔ ایک دن قبل بھی وزیر مالگذاری ایکناتھ کھڈسے کے پرسنل اسسٹنٹ ( پی اے ) کو لینڈ الاٹمنٹ کیس میں 30 کروڑ روپئے رشوت طلب کرنے پر گرفتار کرلیا گیا ۔ دریں اثناء اپوزیشن کانگریس اور این سی پی نے ریاست میں کرپشن سے نمٹنے میں ناکامی پر چیف منسٹر دیویندر فڈنویس کو تنقید کا نشانہ بنایا ۔ کانگریس ترجمان النصیر ذکریا نے کہا کہ پہلی مرتبہ کھڈسے ایک پی اے اور اب ایک محکمہ کے اعلیٰ عہدیدار جس کی قیادت چیف منسٹر کرتے ہیں کی گرفتاری سے ایک نمونہ سامنے آیا ۔ جب کہ بیشتر کیسوں کو مخفی رکھا گیا ۔ ایسا معلوم ہوتا ہے کہ چیف منسٹر دیویندر فڈنویس کرپشن کے مسئلہ پر قابو پانے میں ناکام ہوگئے ۔ نیشنلسٹ کانگریس پارٹی کے ترجمان نواب ملک نے کہا کہ چیف منسٹر نے یہ دعوی کیا تھا کہ کرپشن کو ہرگز برداشت نہیں کیا جائے گا لیکن ریاست میں کرپشن عام ہوگیا ہے ۔ انہوں نے دریافت کیا کہ چیف منسٹر نے کرناٹک کے خطوط پر لوک ایوکت ایکٹ میں ترمیم کیوں نہیں کی ہے کیوں کہ وہ جانتے ہیں کہ اس اقدام سے ان کے کئی ایک کابینہ رفقاء جیل جاسکتے ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT