Friday , August 18 2017
Home / ہندوستان / مہاراشٹرا میں مسلم کوٹہ پر عمل آوری کا مطالبہ

مہاراشٹرا میں مسلم کوٹہ پر عمل آوری کا مطالبہ

ریاست گیر ایجی ٹیشن شروع کرنے کانگریس کی دھمکی: عارف نسیم خاں
ممبئی 6 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) حکومت مہاراشٹرا کی جانب سے مرہٹوں کو تحفظات کی تائید میں بمبئی ہائی کورٹ محں حلفنامے داخل کئے جانے کے ایک دن بعد کانگریس نے دھمکی دی ہے کہ تعلیمی اداروں میں مسلمانوں کو دیئے گئے تحفظات کی بی جے پی کی زیرقیادت حکومت کی جانب سے منسوخی کے خلاف ایجی ٹیشن شروع کرنے کی دھمکی دی ہے۔ بی جے پی حکومت نے گزشتہ سال تعلیمی اداروں میں مسلم تحفظات کو منسوخ کردیا تھا۔ کانگریس ان تحفظات پر عمل آوری کا مطالبہ کررہی ہے۔ کانگریس لیڈر اور سابق وزیر محمد عارف نسیم خاں نے کہاکہ ’’حکومت مہاراشٹرا اگر مسلم کوٹہ پر عمل آوری کا فیصلہ نہیں کرتی تو کانگریس اس مسئلہ پر ریاست گیر پیمانہ پر ایجی ٹیشن کرے گی۔ عارف نسیم خاں نے حکومت کے حلفنامے کا خیرمقدم کرتے ہوئے یاد دلایا کہ کانگریس کی قیادت میں یو پی اے حکومت نے مراٹھوں اور مسلمانوں کو سرکاری ملازمتوں اور  تعلیم میں تحفظات فراہم کیا تھا۔ انھوں نے کہاکہ ’’ہائی کورٹ نے اگرچہ مراٹھوں کے لئے 16 فیصد اور مسلمانوں کے لئے 5 فیصد کوٹہ پر حکم التواء جاری کردیا تھا۔ تاہم تعلیمی اداروں میں مسلم تحفظات کی اجازت دی گئی تھی۔ لیکن بی جے پی چیف منسٹر دیویندر فڈنویس نے مسلم کوٹہ سے متعلق آرڈیننس کو منسوخ کردیا تھا۔ تاہم تعلیمی اداروں میں کوٹہ کی ہائی کورٹ نے اجازت دی تھی۔

TOPPOPULARRECENT