Thursday , September 21 2017
Home / ہندوستان / مہاراشٹرا میں میلادالنبیؐ کے باوجود شراب کی دوکانات کھلی رکھنے کی اجازت

مہاراشٹرا میں میلادالنبیؐ کے باوجود شراب کی دوکانات کھلی رکھنے کی اجازت

ممبئی۔/22 ڈسمبر، ( سیاست ڈاٹ کام ) حکومت مہاراشٹرا نے عیسائیوں کے تہوار کرسمس اور سال نو کے پیش نظر 24 ڈسمبر سے رات دیر گئے اور صبح کی اولین ساعتوں تک شراب کی دوکانات کھلی رکھنے کی اجازت دی ہے اور یہ بھی اتفاق ہے کہ 24ڈسمبر کو عید میلادالنبیؐ بھی ہے۔ حکومت کے اس فیصلہ پر اپوزیشن کانگریس، اے آئی ایم آئی ایم نے تنقید کی اور اس روز شراب کی فروخت پر امتناع عائد کرتے ہوئے مسلمانوں کے جذبات مجروح کرنے کا الزام عائد کیا۔ ریاستی محکمہ داخلی کی طرف سے جاری ایک سرکیولر میں 24ڈسمبر، 25ڈسمبر اور 31ڈسمبر کو رات دیر گئے تک شراب کی دوکانات اور بارس کھلے رکھنے کی اجازت دی گئی ہے۔ بیرونی ساختہ شراب کی ریٹیل دوکانات ان تینوں دن رات 10:30 بجے تا ایک بجے کھلی رکھی جائیں گی۔ تمام بارس، رستوراں وغیرہ ( بجز پولیس کمشنریٹ حدود ) رات 11بجے کے صبح 5بجے کھلے رہیں گے۔ کانگریس لیڈر سچن ساوتن نے دعویٰ کیا کہ اس سے ثابت ہوگیا ہے کہ حکومت نے مسلمانوں کے مطالبہ پر کوئی توجہ نہیں دی ہے۔ سچن ساونت نے الزام عائد کیا کہ مہاراشٹرا کی بی جے پی حکومت آر ایس ایس کے نظریہ پر کام کررہی ہے اور آسانی سے یہ دیکھا جاسکتا ہے کہ مسلمانوں کے مطالبہ کو حکومت کوئی اہمیت نہیں دے رہی ہے اور وہ (مسلمان ) خود کو دوسرے درجہ کا شہری سمجھنے پر مجبور ہوگئے ہیں۔سینئر کانگریس اور سابق وزیر لیڈر نسیم خان اور دوسروں نے دو روز قبل ریاستی وزیر داخلہ سے ملاقات کرتے ہوئے یوم میلادالنبی ﷺ کے موقع پر مسلمانوں کے جذبات کا احترام کرتے ہوئے شراب کی فروخت پر امتناع عائد کرنے کا مطالبہ کیا تھا ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT