Thursday , September 21 2017
Home / سیاسیات / مہاراشٹرا میں کسانوں کیلئے خصوصی پیاکیج کی ضرورت نہیں

مہاراشٹرا میں کسانوں کیلئے خصوصی پیاکیج کی ضرورت نہیں

ممبئی ۔ 14 ۔ دسمبر : ( سیاست ڈاٹ کام) : مہاراشٹرا میں بی جے پی کی زیر قیادت مقروض حکومت نے خشک سالی سے متاثرہ علاقوں کے کسانوں کے لیے خصوصی پیاکیج کے اعلان پر آمادہ نہیں ہے جب کہ حکومت کی ایک حلیف شیوسینا اور اپوزیشن کانگریس اور این سی پی نے اسمبلی کے جاریہ اجلاس میں جارحانہ موقف اختیار کیا ہے ۔ بی جے پی وزیر فینانس سدھیر منگنتیوار نے بتایا کہ حکومت نے پہلے ہی کسانوں کے لیے 7000 کروڑ کی مالیاتی گنجائش فراہم کی ہے اور کوئی اضافی پیاکیج کی چندان ضرورت نہیں ہے ۔ اسمبلی کے سرمائی اجلاس کا پہلا ہفتہ کسانوں کے لیے پیاکیج کے مطالبہ پر اپوزیشن کی ہنگامی آرائی کے نذر ہوگیا ۔ اپوزیشن کو یہ توقع ہے کہ کم از کم 10 ہزار کروڑ کے پیاکیج کا اعلان کیا جائے گا لیکن چیف منسٹر دیویندر فنڈنویس کسانوں کے لیے مختصر میعادی پیاکیج کی بجائے طویل المیعاد اقدامات کے حق میں ہیں ۔ منگنتیوار نے بتایا کہ حکومت نے مطالبات زر کے ذریعہ کسانوں کے لیے بجٹ میں وافر فنڈس مختص کئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ بجٹ میں مختص فنڈس کے مطابق خشک سالی سے نمٹنے کے لیے 4200 کروڑ ، قومی آفات سماوی کے تحت کسانوں کی امداد کے لیے 944.92 کروڑ ، فوڈ سیکوریٹی مشن کے لیے 277 کروڑ اور فصل بیمہ اسکیم کے لیے 93 کروڑ روپئے خرچ کئے جائیںگے اور یہ اقدامات کسانوں کے لیے شروع کردئیے گئے ہیں لہذا علحدہ پیاکیج اعلان کرنے کی ضرورت نہیں ہے ۔ انہوں نے اپوزیشن کے ان الزامات کو مضحکہ خیز قرار دیا کہ حکومت کسانوں کے مسائل پر سنجیدہ نہیں ہے اور کہا کہ مذکورہ اقدامات سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ حکومت کسانوں کے لیے کس قدر سنجیدہ ہے تاہم اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر رادھا کرشنا پاٹل نے بتایا کہ بی جے پی کے دور حکومت میں 3000 سے زائد کسانوں نے خود کشی کرلی ہے ۔ اس کے باوجود چیف منسٹر اور وزیر فینانس نے پیاکیج کا اعلان نہیں کیا ہے جو کہ شرمناک ہے قانون ساز کونسل میں اپوزیشن لیڈر دھننجئے منڈے نے بھی اس طرح کے خیالات کا اظہار کیا ہے ۔ ایک اور کانگریس لیڈر سنجے دت نے یہ ادعا کیا ہے کہ چیف منسٹر فڈنویس اپنی ہی پارٹی کے سینئیر وزراء کے درمیان پھنس گئے ہیں جب کہ حلیف شیوسینا کے قائدین مختلف مسائل بشمول کسانوں کی خود کشی پر تنقید کا نشانہ بنا رہے ہیں ۔ انہوں نے بتایا کہ وزیر فینانس منگنتیوار اور وزیر زراعت ایکناتھ کھاڈسے چیف منسٹر کے مخالفین پر تنقید کررہے ہیں ۔ تاہم وزیر فینانس نے ان الزامات کی تردید کی ہے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT