Sunday , September 24 2017
Home / سیاسیات / مہاراشٹرا میں کسانوں کیلئے کونسلنگ سنٹرس کے قیام پر کانگریس کا اعتراض

مہاراشٹرا میں کسانوں کیلئے کونسلنگ سنٹرس کے قیام پر کانگریس کا اعتراض

ممبئی۔ 14 اکتوبر (سیاست ڈاٹ نیوز) مہاراشٹرا پردیش کانگریس نے آج یہ انتباہ دیا ہے کہ اگر حکومت نے کسانوں کیلئے نفسیاتی صلاح و مشورہ کے مراکز (کونسلنگ سنٹرس) کے قیام کے فیصلہ سے دستبرداری اختیار نہیں کرے گی تو ریاست بھر میں احتجاجی تحریک شروع کردی جائے گی۔ ریاستی صدر کانگریس اشوک چوہان نے حکومت مہاراشٹرا کے اس فیصلہ کی مذمت کی ہے کہ کسانوں کا ذہنی توازن بگڑ گیا ہے اور انہیں خودکشی سے باز رکھنے کیلئے نفسیاتی علاج کروایا جائے گا۔ سابق چیف منسٹر نے کہا کہ مرکزی اور ریاستی حکومتیں کسانوں کو مالیاتی امداد (معاوضہ) فراہم کرنے میں ناکام ہوگئی ہیں جس کے نتیجہ میں وہ معاشی بحران سے دلبرداشتہ ہوکر خودکشی پر مجبور ہیں، لیکن حکومت نے تلخ حقائق کو نظرانداز کردیا اور کسانوں کو مالی امداد فراہم کرنے کے بجائے انہیں ’’پاگل‘‘ قرار دے رہی ہے۔ نفسیاتی علاج کروانا چاہتی ہے۔ واضح رہے کہ ریاستی حکومت نے 24 ستمبر کو یہ احکامات جاری کئے تھے کہ 14 اضلاع میں کونسلنگ سنٹرس قائم کئے جائیں گے۔

TOPPOPULARRECENT