Tuesday , August 22 2017
Home / ہندوستان / مہلوک بی ایس ایف سپاہی کے ارکان خاندان کی توہین

مہلوک بی ایس ایف سپاہی کے ارکان خاندان کی توہین

آدتیہ ناتھ کی ملاقات کے بعد انتظامیہ نے اے سی ، صوفہ اور قالین واپس لے لئے
دیوریا ( یو پی ) ۔ /14 مئی (سیاست ڈاٹ کام) مہلوک بی ایس ایف کانسٹبل پریم ساگر کے ارکان خاندان کو عجیب و غریب صورتحال کا سامنا کرنا پڑا ۔ چیف منسٹر یوگی آدتیہ ناتھ کے جمعہ کو دورہ سے قبل انتظامیہ نے ان کے گھر پہونچ کر ایرکنڈیشنر نصب کیا ۔ صوفہ سیٹ اور قالین کا بھی انتظام کیا ۔ لیکن حیرت انگیز پہلو یہ تھا کہ چیف منسٹر کے جاتے ہی یہ تمام چیزیں واپس لے لی گیئں۔ واضح رہے کہ پریم ساگر کو جموں و کشمیر میں لائین آف کنٹرول کے قریب پاکستانی فوج نے ہلاک کرکے ان کی نعش مسخ کردی تھی ۔ ساگر کے ارکان خاندان نے آخری رسومات انجام دینے سے انکار کردیا اور یہ شرط رکھی کہ چیف منسٹر ان کے گھر آئیں ۔ چنانچہ یہ شرط منظور کرلی گئی تھی  اور آدتیہ ناتھ کی یہاں آمد کے موقع پر گاؤں کی سڑکوں کو صاف کیا گیا اور جو نالے کھلے تھے انہیں عارضی طور پر بند کردیا گیا ۔ عہدیداروں نے آدتیہ ناتھ کے یہاں سے جاتے ہی گھر سے قالین ، صوفہ اور اے سی لیکر چلے گئے ۔

TOPPOPULARRECENT