Tuesday , September 26 2017
Home / شہر کی خبریں / مہیشورم اسمبلی کے مسلم اکثریتی علاقے بنیادی سہولتوں سے محروم

مہیشورم اسمبلی کے مسلم اکثریتی علاقے بنیادی سہولتوں سے محروم

حکومت کی لاپرواہی پر عوام عاجز ، شاہین نگر چوراہا پر راستہ روکو احتجاج
حیدرآباد۔6 مارچ (سیاست نیوز) حلقہ اسمبلی مہیشورم کے مسلم اکثریتی علاقوں میں بنیادی سہولتوں کی محرومی سے عاجز آکر مقامی افراد نے آج بڑے پیمانے پر احتجاج منظم کیا۔ ایراکنٹا، سعادت نگر، شاہین نگر، وادی ھدی اور اطراف کے علاقوں سے تعلق رکھنے والے عوام کی کثیر تعداد نے احتجاجی دھرنا منظم کرتے ہوئے شاہین نگر چوراہے پر راستہ روکو احتجاج منظم کیا۔ مقامی رکن اسمبلی ٹی کرشنا ریڈی کی جانب سے ان علاقوں کو نظرانداز کرنے پر بطور احتجاج ان کے خلاف بینرس تیار کیئے گئے تھے۔ احتجاجیوں نے ایک بڑے ٹرک پر احتجاجی بینر لگایا جس پر ٹی کرشنا ریڈی کے علاوہ وزیر بلدی نظم و نسق کے ٹی راما رائو کے وعدے درج تھے۔ مقامی افراد نے الزام عائد کیا کہ کے ٹی آر نے مقامی مسائل کی یکسوئی کا وعدہ کیا تھا لیکن آج تک وعدوں کی تکمیل نہیں کی گئی۔ احتجاجیوں نے کہا کہ ہمیں وعدے نہیں ترقی چاہئے اور کے ٹی آر کو جھوٹے وعدوں سے گریز کرنا چاہئے۔ احتجاجیوں نے بتایا کہ گزشتہ طویل عرصے سے ان علاقوں کو ترقیاتی سرگرمیوں کے سلسلہ میں نظرانداز کردیا گیا ہے۔ یہ علاقے بنیادی سہولتوں جیسے پینے کے پانی کی سربراہی سے محروم ہے۔ متعلقہ رکن اسمبلی نے بورویلس کی تنصیب کا وعدہ کیا تھا لیکن آج تک اس سلسلہ میں اقدامات نہیں کئے گئے۔ تیزی سے بڑھتی آبادی کے باوجود یہ علاقے برقی کی موثر سربراہی اور ڈرنیج و سی سی روڈ کی تنصیب سے محروم ہیں۔ ان مسائل کے سلسلہ میں رکن اسمبلی سے بارہا نمائندگی کی گئی لیکن کوئی عملی اقدامات نہیں کئے گئے۔ عوام نے کہا کہ اگر وزیر بلدی نظم و نسق مسائل کی یکسوئی پر توجہ نہیں دیں گے تو احتجاج میں شدت پیدا کی جائے گی۔

TOPPOPULARRECENT