Sunday , July 23 2017
Home / دنیا / میجر گوگوئی کو ایوارڈ دیئے جانے کی مذمت

میجر گوگوئی کو ایوارڈ دیئے جانے کی مذمت

یہ انسانیت کی توہین ہے ۔ پاکستان کا شدید رد عمل
اسلام آباد 25 مئی ( پی ٹی آئی ) پاکستان نے ایک ہندوستانی فوجی عہدیدار کو ‘ جس نے ایک عام شہری کو انسانی ڈھال کے طور پر استعمال کرنے اپنی گاڑی سے باندھ دیا تھا ‘ اعزاز دئے جانے کی مذمت کی ہے ۔ پاکستانی دفتر خارجہ کے ترجمان نفیس ذکریا نے اپنی ہفتہ وار پریس کانفرنس میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ میجر لیتول گوگوئی کو جنہوں نے ایک کشمیری نوجوان کو انسانی ڈھال کے طور پر استعمال کیا تھا ‘ ایوارڈ دینا ایک جرم ہے اور یہ انسانیت کی توہین ہے ۔ بین الاقوامی برادری اور خاص طور پر اقوام متحدہ کو اس بات کا نوٹ لینے کی ضرورت ہے ۔ لیتول گوگوئی 53 راشٹریہ رائفلس کے میجر ہیں اور انہیں ہندوستانی فوجی سربراہ کی جانب سے انسداد تخریب کاری کاموں میں بہترین کارکردگی پر ستائشی کارڈ دیا گیا تھا ۔ ذکریا نے ہندوستان پر الزام عائد کیا کہ وہ پاکستان میں دہشت گردانہ سرگرمیوں کو فروغ دے رہا ہے اور فنڈز فراہم کر رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستانی قیدی کلبھوشن جادھو نے پاکستان کو جو اقبالی بیان دیا ہے وہ اس بات کا ثبوت ہے ۔ بین الاقوامی عدالت انصاف کی جانب سے جادھو کیس میں دی گئی رولنگ کا تذکرہ کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان اس کیس کی آئندہ سماعت کی تیاری کر رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر سے فوج کا تخلیہ کروایا جانا چاہئے تاکہ وہاں اقوام متحدہ سلامیت کونسشل کی قرار دادوں پر عمل کیا جاسکے تاکہ کشمیری عوام اپنے حق خود ارادیت کا اظہار کرسکیں۔ چین ۔پاکستان معاشی راہداری کے تعلق سے انہوں نے کہا کہ اس سے سارے علاقہ کو فائدہ ہوگا صرف پاکستان کو نہیں ۔ انہوں نے کہا کہ کئی ملکوں نے اس پراجیکٹ میں شمولیت کی خواہش ظاہر کی ہے ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT