Tuesday , September 26 2017
Home / اضلاع کی خبریں / میدک میں سڑکوں کی تعمیر کیلئے رقمی منظوری

میدک میں سڑکوں کی تعمیر کیلئے رقمی منظوری

میدک ۔ 8 ۔ اکٹوبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) علحدہ ریاست تلنگانہ کے قیام کے ساتھ ہی ریاست میں برسراقتدار آنے والی تلنگانہ راشٹریہ سمیتی سرکار اپنے 15 ماہی حکومت کے دوران ساری ریاست میں آر اینڈ بی سڑکوں کی ترقی کیلئے 1146 کروڑ روپئے جاری کیا ہے ۔ اس طرح حلقہ اسمبلی میدک میں اس مقصد کیلئے 300 کروڑ روپئے جاری کیا گیا ہے ۔ ریاستی وزیر عمارت و شوارع مسٹر ٹی ناگیشور راؤ نے حلقہ اسمبلی میدک کے رامائم پیٹ ، دولت آباد سڑک کو ڈبل لائننگ سڑک میں تبدیلی کیلئے سنگ بنیاد رکھنے کے موقع پر اپنے ان خیالات کا اظہار کیا ۔ انہوں نے ایم ایل اے میدک و ریاستی ڈپٹی اسپیکر قانون ساز اسمبلی کی حرکیاتی خدمات کی خوب ستائش کرتے ہوئے کہا کہ پدما دیویندر ریڈی نے اپنی کامیاب مساعی سے اپنے حلقہ میں شامل منڈل جات رامائم پیٹ ، پاپنا پیٹ اور چنا شکرم پیٹ کے بشمول میدک ٹاون میں سڑکوں کی توسیع و ترقی کیلئے 300 کروڑ روپئے حاصل کیں ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ میدک ٹاون میں اور اس کے نواح میں سڑکوں کی ترقی کلورش اور برجوں کی تعمیر کیلئے 42کروڑ صرف کئے جارہے ہیں ۔ انہوں نے بتایا کہ میدک ، سدی پیٹ سڑک پر انتہائی ابتر 2 کیلو میٹر طویل سڑک کو ترقی کیلئے 4 کروڑ ، پشپال واگو برج کی ترقی کیلئے 4 اور کوری پلی ، چنا شنکرم پیٹ ، پولم پلی پر برجوں کی تعمیر کیلئے 10 کروڑ اور میدک میں علاقہ دائرہ تا سردھنہ گرام پنچایت مستقر تک ڈبل روڈ کی تعمیر کیلئے 1800 کروڑ کی منظوری حاصل ہوئی ہے ۔ اس طرح منڈل میناشکرم پیٹ کے ممداپور برائے درپلی کی سڑک کی تعمیر اور رامائم پیٹ پر ڈبل روڈ اور خواجہ پورتا کوسٹور سڑک کی تعمیر کیلئے ایک کروڑ 90 لاکھ منڈل پاپنا پیٹ میں من پور سڑک یلاریڈی حلقہ اسمبلی میں انکاپلی برج کی تعمیر کیلئے 80 کروڑ منظور کئے گئے ہیں ۔ مسٹر ناگیشور راو نے مزید کہا کہ منڈل پاپنا پیٹ ، چنا شنکرم پیٹ ، رامائم پیٹ کے علاوہ میدک منڈل کے دیہاتوں کی پنچایت راج سڑکوں سے مین روڈ آر اینڈ بی کو ملانے والی دیہی سڑکوں کو بی ٹی میں تبدیل کرنے کیلئے 1801 کروڑ کی منظوری حاصل ہوئی ہے ۔ اس پروگرام میں ڈپٹی اسپیکر ریاستی قانون ساز اسمبلی شریمتی ایم پدما دیویندر ریڈی ضلع کلکٹر رونالڈروس ، ریاستی وزیر آبپاشی مسٹر ٹی ہریش راؤ کے علاوہ سرکاری عہدیدار ، منتخب عوامی نمائندے بھی شریک تھے ۔

TOPPOPULARRECENT