Friday , August 18 2017
Home / شہر کی خبریں / میرے خلاف کانگریس کی کارروائی آسانی نہیں : کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی

میرے خلاف کانگریس کی کارروائی آسانی نہیں : کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی

گوردھن ریڈی اور سروے ستیہ نارائنا کے خلاف ماضی میں کارروائی کیوں نہیں کی گئی ، کانگریس ایم ایل اے کا ردعمل
حیدرآباد ۔ 6 ۔ جون : ( سیاست نیوز ) : کانگریس کے سینئیر رکن اسمبلی مسٹر کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی نے کہا کہ ان کے خلاف کارروائی کرنا آسان نہیں ہے ۔ ماضی میں کانگریس کے رکن راجیہ سبھا مسٹر پی گوردھن ریڈی اور سابق مرکزی وزیر مسٹر سروے ستیہ نارائنا نے قائد اپوزیشن مسٹر کے جانا ریڈی کو کئی مرتبہ کھلے عام تنقید کا نشانہ بنایا ۔ ان کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی گئی ۔ آج میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے اپنے موقف میں نرمی پیدا کرنے والے سابق وزیر مسٹر کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی نے کہا کہ کانگریس پارٹی میں وجہ نمائی نوٹس جاری کرنا عام بات ہے ۔ سمندر جیسی کانگریس پارٹی میں ایسے چھوٹے موٹے واقعات رونما ہوتے رہتے ہیں ۔ ان کے خلاف کارروائی کرنا آسان نہیں ہے ۔ انہوں نے اصل موضوع سے توجہ ہٹاتے ہوئے کہا کہ کرشنا واٹر بورڈ کے فیصلے اضلاع محبوب نگر اور نلگنڈہ کے لیے نقصان دہ ثابت ہوں گے ۔ ایک منظم سازش کے تحت واٹر بورڈ پر دباؤ بنایا جارہا ہے ۔ ریاستی حکومت کی جانب سے مکتوب کو صرف احتجاجی مکتوب روانہ کرنا کافی نہیں ہے ۔ چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر کو دہلی پہونچ کر مرکز سے نمائندگی کرتے ہوئے تلنگانہ کے مفادات کا تحفظ کرنے پر زور دیا ۔ واضح رہے کہ کل مسٹر کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی نے پارٹی کی جانب سے انہیں دی گئی وجہ نمائی نوٹس پر سخت ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وہ کیپٹن اتم کمار ریڈی کو بحیثیت صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی قبول کرنے کے لیے تیار نہیں ہے تو تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی انہیں وجہ نمائی نوٹس دینے کی مجاز نہیں ہے ۔ انہیں صرف آل انڈیا کانگریس کمیٹی وجہ نمائی نوٹس دے سکتی ہے ۔ گذشتہ 60 سال میں سب سے کمزور کانگریس کیپٹن اتم کمار ریڈی کے دور میں ہوئی ہے ۔ وہ پارٹی کو استحکام کرنے میں ناکام ہوئے ہیں ۔ اپنے دو مرتبہ کامیاب حلقہ کوداڑ سے تیسری مرتبہ کامیاب ہونے کے آثار کو نہ دیکھتے ہوئے انہوں نے راج شیکھر ریڈی سے ہاتھ پیر جوڑتے ہوئے حضور نگر سے ٹکٹ حاصل کیا اور کوداڑ سے ایک مسلم امیدوار کو میدان میں اتارتے ہوئے اس کے شکست کے ذمہ دار بنے تھے ۔ بعد میں اپنی شریک حیات کو رکن اسمبلی بنایا ۔ تلنگانہ کی تحریک میں انہوں نے ہاوزنگ وزارت سے استعفیٰ دیا ۔ کیپٹن اتم کمار ریڈی اس کو حاصل کیا ۔ ان کی طرح تلنگانہ تحریک میں حصہ لینے والے سینکڑوں کارکن ہیں ۔ انہیں صدارت سونپنے کا مطالبہ کیا تھا ۔۔

TOPPOPULARRECENT