Sunday , September 24 2017
Home / شہر کی خبریں / میڈیکل شعبہ میں نیوکلیئر سائنس سے مزید ترقی کی راہیں ہموار

میڈیکل شعبہ میں نیوکلیئر سائنس سے مزید ترقی کی راہیں ہموار

مسلم طلبہ کو اچھا ڈاکٹر اچھا انجینئر بننے کا مشورہ، ایمسیٹ پری کونسلنگ سے زاہد علی خان کا خطاب
حیدرآباد ۔ 16 جولائی (سیاست نیوز) آج سائنس ٹیکنالوجی میں نمایاں ترقی ہوئی ہے۔ اس میں میڈیکل شعبہ سرفہرست ہے۔ نیوکلیئر سائنس اور نیوکلیئر ٹیکنالوجی تیزی سے آگے بڑھ رہی ہے۔ امریکہ میں میڈیکل ایجوکیشن میں اس کو شامل کیا گیا۔ ہندوستان ہر شعبہ میں ترقی کررہا ہے۔ میڈیکل کے طلبہ ان عصری سہولیات سے بھرپور استفادہ کریں۔ ان خیالات کا اظہار جناب زاہد علی خان ایڈیٹر سیاست نے یہاں ایمسیٹ II میڈیکل کے پری کونسلنگ سیشن کے طلبہ اور سرپرستوں کو محبوب حسین جگر ہال میں مخاطب کرتے ہوئے کیا اور کہا کہ آج طالب علم انجینئرنگ اور میڈیکل کرتے ہوئے انجینئر ڈاکٹر تو بن رہا ہے لیکن وہ اپنے شعبہ میں مہارت حاصل کرتے ہوئے اچھا ڈاکٹر یا اچھا انجینئر بنے۔ انہوں نے مسلم طلبہ کے شاندار مظاہروں کے حوالہ سے کہا کہ ادارہ سیاست تعلیمی میدان میں بھی اپنی سرگرمیاں دیگر شعبہ جات کی طرح جاری رکھا ہے۔ سیاست کیریئر گائیڈنس سنٹر سے ہر قسم کی تعلیمی رہنمائی اور کونسلنگ کی جاتی ہے جس سے بے شمار طلبہ اور سرپرست استفادہ کرتے ہوئے اہم پروفیشنل کورسیز میں داخلے حاصل کررہے ہیں۔ کونسلنگ کے طریقہ کار سے واقف ہوکر اچھے کالجس اور کورسز میں داخلے حاصل کرسکتے ہیں۔ کونسلنگ میں اسنادات کی تصدیق، کالجس کورسز کا انتخاب اور ویب آپشن کی صحیح واقفیت رینک کے لحاظ سے داخلے دلانے میں معاون ہوتی ہے۔ اب ایمسیٹ II کے ذریعہ ایم بی بی ایس اور بی ڈی ایس میں داخلے کیلئے تلنگانہ میں کے این آر یونیورسٹی آف ہیلت سائنس کے تحت جنرل کونسلنگ ہوئی۔ ایمسیٹ کی میڈیکل کونسلنگ میں سال حال بہت تبدیلیاں دیکھی گئی۔ انٹرمیڈیٹ بی پی سی امیدوار نے تلنگانہ میں پہلا ایمسیٹ اور ایمسیٹ II اور اے پی ایمسیٹ لکھا اور قومی سطح پر نیٹ I اور اب نیٹ II ہونے والا ہے۔ اس موقع پر پروفیسر سید اسمعیل سابق ڈین ہارٹیکلچر وٹرنری یونیورسٹی نے بی پی ایس سی، اگریکلچر اور ہارٹیکلچر کورسز کی تفصیلات بتاتے ہوئے اب ایمسیٹ II کے ذریعہ 30 جولائی تک آن لائن رجسٹریشن کروائیں۔ پھر 4 اگست تک پرنٹ آوٹ داخل کرتے ہوئے ویب کونسلنگ میں شریک ہو۔ ڈاکٹرعبدالرحمن نے اگریکلچر کورسز کی اہمیت پر روشنی ڈالی۔ جناب اکبرالدین صدیقی نے ایمسیٹ اور نیٹ کے متعلق سوالات کے ذریعہ محصلہ نشانات اور رینک کے متعلق محصلہ نشانات کے طریقہ کو بتلایا۔ خواجہ علی شعیب نے ویب کونسلنگ کے طریقہ کار کو مکمل طور پر پیش کیا اور امیدوار کو کن کن اسنادات کی ضروریات درکار ہوتی ہے اس کو بتلایا۔ امیدوار اس کی تیاری کرتے ہوئے اسنادات کی تصدیق کرواتے ہوئے ویب کونسلنگ میں شرکت کریں۔ احمد بشیرالدین فاروقی ریٹائرڈ ڈپٹی ایجوکیشنل آفیسر نے اس قسم کے پروگرام کو انعقاد کے وقت کی اہم ضرورت قرار دیتے ہوئے بتلایا کہ اس سے ہر سال بے شمار طلبہ کو فائدہ ہورہا ہے اور میڈیکل، انجینئرنگ اور دیگر پروفیشنل کورسز میں داخلے حاصل ہورہے ہیں۔ ایم اے حمید کیریئر کونسلر سیاست نے ایمسیٹ II کے جنرل ویب کونسلنگ، ایم بی بی ایس کیلئے مسلم کالجس کی علحدہ کونسلنگ میںشرکت کیلئے طلبہ اور سرپرست کو باخبر رہنے کا مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ کونسلنگ کی کسی کو اطلاع نہیں دی جاتی بلکہ طالب علم کو اپنے رینک پر کس تاریخ کو کہاں جانا ہوتا ہے شخصی طور پر معلوم کرنا ہوگا۔ اسنادات کے ساتھ رجوع ہوکر داخلے حاصل کرنا ہوگا۔ ایم بی بی ایس میں کنوینر کونسلر کے تحت اے زمرہ کی نشستیں پر ہوتی ہیں اور بی زمرہ اور سی زمرہ کے داخلے علحدہ ہوتے ہیں۔ جناب منظوراحمد نے مسلم طلبہ کو پہلے عام زمرہ کے تحت گورنمنٹ اور نان مائناریٹی کالجس میں داخلے حاصل کرنے کا مشورہ دیا اور بتلایا کہ ہر سال 35 ، 40 نشستیں اضلاع میں داخلے نہ لینے پر غیروں کو چلے جارہی ہیں۔ اس موقع پر ماہرین کی ٹیم نے سوالات کے تشفی بخش جوابات دیئے۔ آخر میں ایم اے حمید نے شکریہ ادا کیا۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT