Monday , June 26 2017
Home / شہر کی خبریں / میڈیکل فارمیسی اور ادویات ساز کمپنیاں ناراض

میڈیکل فارمیسی اور ادویات ساز کمپنیاں ناراض

ادویات پر مرکزی حکومت کی پالیسی کے خلاف ہڑتال کا اعلان

حیدرآباد۔21مئی (سیاست نیوز) مرکزی حکومت کی جانب سے ادویات کے متعلق اختیار کی جانے والی پالیسی پر شعبہ طب بالخصوص ادویات ساز کمپنیوں اور میڈیکل و فارمیسی چلانے والوں میں ناراضگی پائی جاتی ہے۔ حکومت ہند نے تجویز کردہ ادویات کو آن لائن رکھنے اور آن لائن ادویات کی فروخت کے علاوہ جنرک میڈیسن کی فروخت کے رجحان میں اضافہ کے سلسلہ میں جو اقدامات شروع کئے ہیں اس کے سبب ادویات ساز کمپنیو ںکے ذمہ دارو ںمیں شدید ناراضگی پائی جانے لگی ہے اور فارمیسی چلانے والوں نے ایک روزہ ہڑتال کا بھی اعلان کردیا ہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ فارمیسی ہڑتال کا مقصد حکومت کی جانب سے آن لائن ادویات کی تجویز اور آن لائن ادویات کی فروخت کے منصوبہ کے خلاف کیا جا رہا ہے لیکن محکمہ صحت کے عہدیداروں کا کہنا ہے کہ در اصل حکومت کی جانب سے جنرک میڈیسن کے فروغ کے لئے جانے والے اقدامات پر ادویات ساز کمپنیاں حکومت سے ناراض ہیں اور اس ناراضگی کے اظہار کیلئے فارمیسی مالکین کو اپنے ہتھیار کے طور پر استعمال کرتے ہوئے آن لائن ادویات کی فروخت کو نشانہ بنایا جا رہا ہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ بڑی ادویات ساز کمپنیوں کی جانب سے تیار کی جانے والی بھاری اور قیمتی ادویات کی فروخت متاثر ہونے کے خدشات کے تحت اس طرح کی کاروائی کی جا رہی ہے جبکہ حکومت کی جانب سے جنرک ادویات کے فروغ کے ذریعہ علاج و معالجہ کے اخراجات میں تخفیف کی کوشش کی جا رہی ہے۔ ادویات کی قیمتو ں کے متعلق ڈاکٹرس کا کہنا ہے کہ یہ بات درست ہے کہ جنرک ادویات کی تجویز میں نمایاں کمی آئی ہے کیونکہ بازار میں معیاری اور بڑی کمپنیو ںکی ادویات موجود ہیں اور عوام ان ادویات کو خرید رہے ہیں جس کے سبب یہ رجحان بڑھتا جا رہا ہے ۔ادویات ساز کمپنیوں کے ذمہ دارو ںکا کہنا ہے کہ ان کی جانب سے تیار کی جانے والی معیاری ادویات اور جنرک ادویات کی قیمتو ںمیںکوئی زیادہ فرق نہیں ہے لیکن ان ادویات کے استعمال کے فروغ سے ادویات ساز کمپنیو ںکو معمولی نقصانات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے ۔ حکومت کا استدلال ہے کہ تمام بیماریوں کے علاج و معالجہ کو قابل دسترس بنانے کے لئے جنرک ادویات کو فروغ دینے کے اقدامات میں شدت پیدا کی جا رہی ہے اور ملک بھر میں سرکاری دواخانوں کے علاوہ عوامی مراکز صحت پر بھی جنرک ادویات کی سربراہی عمل میں لائی جا رہی اور خانگی ڈاکٹر س کو بھی پابند کرنے کے اقدامات کو ممکن بنایا جا رہا ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT