Friday , June 23 2017
Home / شہر کی خبریں / ’ میک ان انڈیا ‘ پر زیادہ توجہ کا مقصد خود مکتفی ہونا

’ میک ان انڈیا ‘ پر زیادہ توجہ کا مقصد خود مکتفی ہونا

’ نیشنل ٹکنالوجی ڈے ‘ سے ڈاکٹر جی ستیش ریڈی اور دیگر کا خطاب
حیدرآباد ۔ 27 ۔ مئی : ( سیاست نیوز ) : وزیر دفاع کے سائنسی مشیر اور ڈائرکٹر جنرل مزائیلس اینڈ اسٹریٹیجک سسٹمس ، ڈی آر ڈی او ڈاکٹر جی ستیش ریڈی نے آج کہا کہ ہندوستان 104 سٹیلائٹس بھیجنے کے موقف میں ہے جو کہ ایک بڑا کارنامہ ہے اور کہا کہ مزید چند اہم لانچس کے لیے کام ہورہا ہے ۔ اے پی اکیڈیمی آف سائنسیس ، تلنگانہ اکیڈیمی آف سائنسیس اور بی ایم برلا سائنس سنٹر کے مشترکہ زیر اہتمام آج یہاں حیدرآباد میں منعقدہ نیشنل ٹکنالوجی ڈے تقریب سے بحیثیت مہمان خصوصی مخاطب کرتے ہوئے ڈاکٹر ستیش ریڈی نے کہا کہ گذشتہ چند سال سے میک ان انڈیا پر زیادہ توجہ دی جارہی ہے جس کا مقصد خود مکتفی ہونا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ڈیفنس پروکیورمنٹ پالیسی کے تحت ملک کے اندر ڈیزائن کیے جانے والے سسٹم کو ترجیح دی جارہی ہے ۔ اختراع کو فروغ دینے کے سلسلہ میں ایک ٹکنالوجی ڈیولپمنٹ فنڈ قائم کیا گیا ہے ۔ جہاں اختراعی نوعیت کے نظریات کی حوصلہ افزائی کی جائے گی اور اس کے لیے فنڈ فراہم کیا جائے گا ۔ ڈاکٹر ستیش ریڈی نے کہا کہ حکومت نے دفاع کے لیے اہم میٹرئیلس پر ایک کمیٹی مقرر کی ہے ۔ حکومت اس کمیٹی کی رپورٹ کا جائزہ لے گی اور بعد میں ضروری اقدامات کرے گی ۔ مسٹر ادے بی دیسائی ، ڈائرکٹر انڈین انسٹی ٹیوٹ آف ٹکنالوجی حیدرآباد نے ان کے خطاب میں ’ سینسرس اینڈ اسمارٹ سٹیز ‘ پر پریزینٹیشن دیا اور ٹکنالوجیز کے بارے میں مخاطب کیا ۔ اس تقریب سے ڈاکٹر کے وی راگھون ، سائنٹسٹ انڈین نیشنل اکیڈیمی آف انجینئرنگ (INAE) ، سابق ڈائرکٹر آئی آئی سی ٹی ، پروفیسر وی اپا راؤ ، وائس چانسلر حیدرآباد یونیورسٹی کے علاوہ ڈاکٹر بی ایل دکشتلو صدر اے پی اکیڈیمی آف سائنسیس ، ڈاکٹر موہن راؤ صدر تلنگانہ اکیڈیمی آف سائنسیس نے بھی مخاطب کیا ۔۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT