Thursday , September 21 2017
Home / شہر کی خبریں / نئی واٹر پائپ لائنس بچھانے سڑکوں کی کھدائی

نئی واٹر پائپ لائنس بچھانے سڑکوں کی کھدائی

اگلے مانسون تک کام مکمل ہوگا ، کمشنر جی ایچ ایم سی کا بیان
حیدرآباد ۔ 3 ۔ نومبر : ( سیاست نیوز ) : جی ایچ ایم سی کی طرف سے شہر میں بارش سے تباہ ہوئی سڑکوں کی مرمت کے کام شروع ہوئے پورا ایک مہینہ بھی نہیں گذرا کہ اب شہر کے ایک حصہ میں واٹر پائپ لائنس بچھانے کے لیے سڑکوں کی کھدائی شروع کررہی ہے ۔ جی ایچ ایم سی نے بارش سے تباہ ہوئی سڑکوں کی مرمت کا کام 75 کروڑ روپئے کے خرچ سے شروع کیا تھا ۔ نئی واٹر پائپ لائنس بچھانے کا پراجکٹ ہڈکو سے ایک ہزار 9 سو 6 کروڑ روپئے کے قرض سے شروع کیا جارہا ہے ۔ اس پراجکٹ کے تحت 56 ذخائر آب تعمیر کئے جائیں گے اور مانجرا ، سنگور ، عثمان ساگر اور حمایت ساگر سے گھروں کو پینے کے پانی کی سربراہی یقینی بنائی جائے گی ۔ کمشنر جی ایچ ایم سی بی جناردھن ریڈی نے واٹر بورڈ عہدیداروں کے ساتھ میٹنگ کے بعد میڈیا سے کہا کہ اگرچہ پراجکٹ کی تکمیل 2018 تک کرنا ہے لیکن اسے مرحلہ وار مئی 2017 تک مکمل کرلیا جائے گا اس طرح اگلے مانسون تک راستے بحال ہوجائیں گے ۔ کھدائی کا کام الوال کاپرا ، اوپل ، رام چندرا پورم ، قطب اللہ پور ، ایل بی نگر ، راجندر نگر ، سری لنگم پلی کوکٹ پلی اور پٹن چیرو میں اور اس کے آس پاس ہوگا ۔ یہ کام مختلف سرکاری محکمہ جات بشمول ٹریفک پولیس اور برقی کے تعاون سے کیا جائے گا ۔ ہر ماہ کنٹراکٹرس عہدیداروں اور ویلفیر تنظیموں کے ساتھ جائزہ اجلاس منعقد ہوں گے تاکہ ایسے اقدامات کیے جائیں جس کے تحت عوام کو کوئی دشواری اور زحمت نہ ہو جہاں واٹر بورڈ کھدائی کرنے والا ہے وہاں سڑکوں کی مرمت کا کام روک دیا گیا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT