Saturday , August 19 2017
Home / اضلاع کی خبریں / نئے اضلاع کی تشکیل کیلئے پیشرفت ، کابینی سب کمیٹی کا اجلاس

نئے اضلاع کی تشکیل کیلئے پیشرفت ، کابینی سب کمیٹی کا اجلاس

مجوزہ ضلع سدی پیٹ میں کریم نگر اور ورنگل کے چند منڈلس شامل ہوں گے
سدی پیٹ۔ 16 اگست (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) حکومت تلنگانہ ریاست کے موجودہ 10 اضلاع میں اضافہ کرتے ہوئے اسے 24 اضلاع کرنے کے لئے اقدامات کررہی ہے۔ تلنگانہ میں اضلاع کی تعداد میں اضافہ حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ حکومت چاہتی ہے کہ اضلاع کی تعداد میں اضافہ کرکے عوام کو ہر طریقے سے سہولت فراہم کرے اور شفاف حکمرانی عوام کو مل سکے۔ اس سلسلے میں ریاستی حکومت سدی پیٹ کو بھی ضلع کا درجہ دے رہی ہے جو کے بانی ٹی آر ایس کے چندر شیکھر راؤ کا خواب تھا جسے انہوں نے 1983ء میں سدی پیٹ کے انتخاب میں پہلی مرتبہ حصہ لیتے ہوئے کے چندر شیکھر راؤ نے خواب دیکھا تھا۔ اب اس خواب کی عملی تعبیر کے لئے اقدامات کا آغاز ہوچکا ہے۔ اس سلسلے میں پیشرفت کرتے ہوئے حال ہی میں سب کمیٹی کا اجلاس منعقد ہوا تھا، جس میں کمیٹی سے متعلق وزراء اور دیگر قائدین بھی موجود تھے۔ اس اجلاس میں متفقہ طور پر اس بات کی تجویز پیش کی گئی کہ پڑوسی اضلاع کریم نگر اور ورنگل کے منڈلوں جس میں کریم نگر کے چند منڈل اور ورنگل کے چند منڈل شامل ہیں۔ انہیں سدی پیٹ میں شامل کرتے ہوئے ضلع کا درجہ سدی پیٹ کو دیا جائے۔ یہاں اس بات کا ذکر ضروری ہے کہ پہلے سرسلہ جوکہ کریم نگر کا اسمبلی حلقہ ہے اور جہاں سے ریاستی وزیر کے ٹی راما راؤ نمائندگی کرتے ہیں،  اسے ضلع کا درجہ دینے کا اعلان کیا گیا تھا لیکن بعدازاں اسے رد کردیا گیا۔ اب سدی پیٹ میں کریم نگر اور ورنگل کے کچھ منڈل جات کو شامل کرتے ہوئے نیا ضلع بنانے کے اقدامات کئے جارہے ہیں۔ اس سلسلے میں دفاتر کیلئے عمارتوں کا انتخاب بھی عمل میں آچکا ہے۔ سدی پیٹ کو ضلع بنانے کے بعد یہاں کے عوام کو کئی طرح کی سہولتیں فراہم کی جائیں گی۔ انہیں اپنے مقاصد کی تکمیل کے لئے دور دراز مقامات پر جانے کی ضرورت نہیں ہوگی۔

TOPPOPULARRECENT