Wednesday , October 18 2017
Home / شہر کی خبریں / نئے اضلاع کے آغاز پر محکمہ اقلیتی بہبود میں ملازمین کا الاٹمنٹ

نئے اضلاع کے آغاز پر محکمہ اقلیتی بہبود میں ملازمین کا الاٹمنٹ

عہدیداروں کو ڈیوٹی پر رجوع ہونے کی ہدایت ، بعض عہدیداروں کو زائد ذمہ داری

حیدرآباد ۔ 10۔اکتوبر (سیاست نیوز) محکمہ اقلیتی بہبود نے دسہرہ کے موقع پر نئے اضلاع کے آغاز کے سبب ملازمین کے الاٹمنٹ کا عمل مکمل کرلیا ہے۔ سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل نے محکمہ پلاننگ سے ڈپیوٹیشن پر حاصل ہونے والے عہدیداروں اور محکمہ کے موجودہ عہدیداروں کے ذریعہ نئے اضلاع میں ڈسٹرکٹ میناریٹی ویلفیر آفیسر اور وقف بورڈ کے انسپکٹر آڈیٹرس کے تقرر کا عمل مکمل کرلیا ہے۔ اقلیتی بہبود کے ملازمین اور عہدیداروں کو نئے تقررات کے سلسلہ میں ہدایات جاری کردی گئی ہیں اور وہ کل 11 اکتوبر کو اپنی متعلقہ ڈیوٹی جوائن کرلیں گے ۔ بتایا جاتا ہے کہ ہر ضلع میں ڈسٹرکٹ میناریٹی ویلفیر آفیسر کے علاوہ اسسٹنٹ میناریٹی ویلفیر آفیسر اور تین افراد پر مشتمل ماتحت عملہ رہے گا۔ چھوٹے اضلاع میں ڈسٹرکٹ میناریٹی ویلفیر آفیسر اور ماتحت عملہ کورکھا گیا ہے۔ ایسے اضلاع جن میں اقلیتوں کی آبادی زیادہ ہے ، وہاں زائد اسٹاف کو متعین کیا گیا ہے۔ اضلاع کو تین زمروں میں تقسیم کیا گیا اور حیدرآباد 46.54 فیصد اقلیتی آبادی کے اعتبار سے اے زمرہ میں ہے، لہذا حیدرآباد میں 10 رکنی اسٹاف کو منظوری دی گئی ہے۔ 20 اضلاع کو بی زمرہ میں رکھا گیا جہاں 5 رکنی اسٹاف ہوگا۔ 6 اضلاع سی زمرہ میں ہیں، جن میں 4 رکنی اسٹاف کا تقرر کیا گیا ہے۔ محکمہ اقلیتی بہبود میں 5 ڈپٹی کلکٹر موجود ہیں اور 12 اسٹیٹسٹکل آفیسرس کی خدمات حاصل کی گئی ہیں۔ ہر ضلع میں اقلیتی بہبود کے دفاتر کا انتخاب کرلیا گیا ہے اور تمام اقلیتی ادارے ایک ہی دفتر سے کام کریں گے۔ ڈسٹرکٹ میناریٹی ویلفیر آفیسر کے تحت ڈائرکٹوریٹ اور اقلیتی فینانس کارپوریشن کی اسکیمات کی ذمہ داری ہوگی۔ بینکوں سے مربوط قرض کی اجرائی اور اسکالرشپ کے معاملات کو ڈسٹرکٹ میناریٹی ویلفیر آفیسر کے تحت کیا گیا ہے ۔ اسی دوران چیف اگزیکیٹیو آفیسر وقف بورڈ اسد اللہ نے بتایا کہ 31 اضلاع میں وقف بورڈ کے انسپکٹر آڈیٹرس کا تقرر کیا گیا ہے اور وہ کل سے اپنی ذمہ داری سنبھال لیں گے۔ ایک انسپکٹر کے ساتھ ایک اٹینڈر بھی فراہم کیا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ سنگاریڈی کے انسپکٹر کو سدی پیٹ ضلع کی زائد ذمہ داری دی گئی ہے جبکہ ضلع کھمم کے انسپکٹر کتہ گوڑم کی زائد  ذمہ داری سنبھالیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ وقف بورڈ کے ریگولر اسٹاف کو انسپکٹر آڈیٹر مقرر کیا گیا ہے اور عارضی ملازمین کے تقررات کا فیصلہ ملتوی کردیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT