Saturday , August 19 2017
Home / اضلاع کی خبریں / نئے سال کا جشن منائیں لیکن لا اینڈ آرڈرکو بھی برقرار رکھیں

نئے سال کا جشن منائیں لیکن لا اینڈ آرڈرکو بھی برقرار رکھیں

کریم نگر میں کمشنر پولیس کملاسن ریڈی کی پریس کانفرنس
کریم نگر۔ 27 ڈسمبر (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) کریم نگر کمشنریٹ حدود میں محکمہ پولیس امن کی برقراری میں 3,580 جرائم درج ہونے پر 3,263 جرائم کی تحقیقات کے بعد کامیاب یکسوئی کی گئی۔ مختلف جرائم کے سدباب کے لئے متعینہ پولیس بخوبی فرائض انجام دے رہی ہے۔ 2014ء میں 232 2015ء میں 268 اور 2016ء میں 269 جرائم ہوئے۔ ان خیالات کا اظہار کمشنر پولیس کملاسن ریڈی نے پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا کے روبرو کیا۔ انہوں نے تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ چوری ، ڈکیتی، مارپیٹ جیسے جرائم کے اعداد و شمار نہیں ہیں۔ 11 اکتوبر کے دسہرہ کے موقع پر پولیس کمشنریٹ کا قیام عمل میں آیا اور انہیں پہلا کمشنر مقرر کیا گیا۔ امن و امان کی برقراری کے لئے اولین توجہ دی گئی۔ ضلع کریم نگر میں ماویسٹ کی سرگرمیاں بھی نہیں ہیں اور فرقہ پرستی یا تشدد کا بھی کوئی واقعہ پیش نہیں آیا۔ خواتین اور طالبات کی حفاظت کے لئے موثر اقدامات کئے جارہے ہیں۔ اس تعلق سے 20 شی ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں۔ تاحال انہوں نے 47 شرپسند چھیڑ چھاڑ کرنے والوں کی کونسلنگ کی گئی دوبارہ ایسی حرکت کرنے والوں کے خلاف مقدمات درج کئے جائیں گے۔ کارڈن سرچ کی وجہ سے عوام کا پولیس پر اعتماد بڑھ رہا ہے۔ کملاسن ریڈی نے کہا کہ قومی یکجہتی، ہم آہنگی، میل میلاپ اور کرسمس تہوار کے موقع پر کوئی بھید بھاؤ نہ ہو، تمام لوگ ایک دوسرے کے مذہب کا احترام کریں اور اپنے اپنے مذہب پر آزادانہ قائم رہیں۔ اس تعلق سے امن کمیٹیاں اور شانتی سکھشما کمیٹی تشکیل دی گئی ہے۔ ان کمیٹیوں میں مجرمانہ ریکارڈ رکھنے والے یا متنازعہ شخصیتوں کو شامل نہیں کیا گیا ہے۔ اسی لئے ان کمیٹیوں کے بہتر نتائج برآمد ہورہے ہیں۔ لوگ اپنے اپنے گھروں میں پرسکون زندگی گزار رہے ہیں۔ کارڈن سرچ کے ذریعہ مشتبہ افراد کو حراست میں لیا جارہا ہے۔ موٹر سائیکلیں، کاروں کے کاغذات نہ ہونے پر چھان بین کی جارہی ہے تاکہ پرتشدد غیرسماجی سرگرمیوں کو جاری رکھنے کا موقع نہ ملے کوئی بھی چھوٹا سا واقعہ ہونے پر پولیس کے علم میں لایا جارہا ہے اور پولیس فوری وہاں پہنچ کر مسائل کو حل کررہی ہے۔ اسی لئے عوام کا پولیس پر اعتماد دن بہ دن بڑھ رہا ہے۔ بلو کوٹس ٹیمیوں کی تشکیل بھی اسی ضمن میں دی گئی ہے۔ انہیں تمام عصری سہولتوں سے لیس کیا گیا ہے۔ سی سی کیمروں کی تنصیب سے مجرموں کی تصویر لی جارہی ہے۔ آواز ریکارڈ کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ عام مقامات پر شراب پینے پر پابندی لگا دی گئی ہے اور شراب کی فروخت کا وقت بھی مقرر کردیا گیا ہے۔ شراب نوشی کے بعد موٹر سائیکل اور کار چلانے والوں کے خلاف سخت قانونی کارروائی کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ نئے سال کی آمد کا جشن ضرور منائیں لیکن دوسروں کو کسی قسم کی کوئی تکلیف نہ پہنچے ۔ آتش بازی اور ڈی جے ساؤنڈ پر امتناع ہے۔ اس کا ضرور خیال رکھا جائے۔ انہوں نے کہا کہ خلاف ورزی کرنے پر سخت سزا دی جائے گی۔

TOPPOPULARRECENT