Saturday , October 21 2017
Home / دنیا / نائب صدرجمہوریہ حامد انصاری کی وزیراعظم کمبوڈیا سے اہم بات چیت

نائب صدرجمہوریہ حامد انصاری کی وزیراعظم کمبوڈیا سے اہم بات چیت

PHONM PENH, SEP 16 (UNI):- Vice President Hamid Ansari (C) being introduced to the Cambodian delegation, at the ceremonial reception at Peace Palace in Phonm Penh on Wednesday. UNI PHOTO-28U

پیس پیالیس میں بات چیت سے قبل گارڈ آف آنر ، دو یادداشت مفاہمت پر دستخط
فوم پینہہ 16 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) نائب صدرجمہوریہ ہند حامد انصاری نے آج وزیراعظم کمبوڈیا ہون سین سے مختلف موضوعات پر تبادلہ خیال کیا اور اُنھیں تیقن دیا کہ میکانگ گنگا کو آپریشن کے تحت مختلف پراجکٹس کو ہندوستان کا مکمل تعاون حاصل رہے گا۔ حامد انصاری نے پیس پیالیس میں مذاکرات کیں جس کے بعد وفود سطح پر بات چیت ہوئی اور دو یادداشت مفاہمت پر دستخط کئے گئے جن میں ایک سیاحت اور دوسرا کوئیک امپیکٹ پراجکٹس شامل ہیں۔ کوئیک امپیکٹ پراجکٹس چار مختلف پراجکٹس پر مشتمل ہے جن میں سے دو ہیلتھ کیر، ایک خواتین کو معلومات اور مواصلاتی ٹیکنالوجی کے ذریعہ بااختیار بنانا اور آخری زراعت کا شعبہ شامل ہیں۔ قبل ازیں پیس پیالیس میں حامد انصاری کا سرکاری طور پر خیرمقدم کرتے ہوئے گارڈ آف آنر پیش کیا۔ صبح میں اُنھوں نے انڈیپنڈنٹ مانیومنٹ کا دورہ بھی کیا جو 1958 ء میں کمبوڈیا کی فرینچ پروٹکٹوریٹ سے آزادی کی علامت کے طور پر تعمیر کیا گیا تھا۔ انھوں نے رائل میموریل کا بھی دورہ کیا جہاں 27 میٹر اونچا آنجہانی بادشاہ نوروڈوم سیہانک کے کانسہ کا مجسمہ ہے۔ حامد انصاری نے وہاں پہونچ کر مجسمہ پر گلہائے عقیدت پیش کئے۔ اس دوران حامد انصاری کی گزر گاہ کے دونوں اطراف اسکولی بچے اُن کا خیرمقدم کرنے کے لئے اپنے ہاتھوں میں کمبوڈیا اور ہندوستان کے پرچم لہرا رہے تھے۔ مذاکرات کے بعد حامد انصاری نے ہندوستان اور کمبوڈیا کے تعلقات کے موضوع پر خطاب بھی کیا۔ بعدازاں انھوں نے کونسل آف منسٹرس کے دفتر کے احاطہ میں ایستادہ مہاتما گاندھی کے مجسمہ پر بھی گلہائے عقیدت پیش کئے۔ میکانگ گنگا کو آپریشن (MGC) کا قیام 2000 ء میں لاؤس کے مقام ویانٹاین میں عمل میں آیا تھا جس میں 6 ممالک اس کے رکن ہیں۔ ہندوستان، تھائی لینڈ، میانمار، کمبوڈیا، لاؤس اور ویتنام اور یہ تمام ممالک چار شعبوں میں ایک دوسرے کے ساتھ تعاون کے پابند ہیں اور وہ شعبہ جات ہیں سیاحت، ثقافت، تعلیم اور ٹرانسپورٹ، رابطہ۔ حامد انصاری نے ہندوستان اور آسیان ممالک کے درمیان تعلقات کو بھی نیا عروج دینے کی ضرورت پر زور دیا۔ دی اسوسی ایشن آف ساؤتھ ایسٹ ایشین نیشنس (ASEAN) میں برونائی، کمبوڈیا، انڈونیشیا، لاؤس، ملائیشیا، میانمار، فلپائن، سنگاپور، تھائی لینڈ اور ویتنام شامل ہیں۔

TOPPOPULARRECENT