Tuesday , May 23 2017
Home / شہر کی خبریں / نائب صدر جمہوریہ حامد انصاری کے فارسی شعر سے سامعین محظوظ

نائب صدر جمہوریہ حامد انصاری کے فارسی شعر سے سامعین محظوظ

حیدرآباد۔/13اپریل، ( سیاست نیوز) نائب صدر جمہوریہ حامد انصاری نے آج مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی میں پہلا محمد قلی قطب شاہ یادگاری خطبہ پیش کرتے ہوئے اپنی شعر و سخن کا مظاہرہ کیا۔ محمد حامد انصاری نے یادگاری خطبہ اگرچہ انگریزی میں پڑھا لیکن انہوں نے ایک فارسی شعر سمیت چار اشعار کے ذریعہ سامعین کو محظوظ کیا اور خوب داد حاصل کی۔نائب صدر جمہوریہ نے خطبہ کے آغاز پرحافظ شیرازی کا فارسی شعر پڑھا :
آسماں بار امانت نہ توانست کشید
قرعہ فال بنام من دیوانہ زدند
انہوں نے درمیان میں دو شعر پڑھے جن میں قلی قطب شاہ کا وہ مشہور شعر بھی شامل ہے جو انہوں نے شہر حیدرآباد کو بساتے وقت بطور دعا لکھا تھا:
میرا شہر لوگاں سوں معمورکر
رکھیا جوں توں دریا میں من یا سمیع
شہر باقی ہے محبت کا نشاں باقی ہے
تو نہیں ہے تری چشم نگراں باقی ہے
ڈاکٹر حامد انصاری نے خطبہ کا اختتام اس شعر پر کیا:
ہم کو مٹا سکے یہ زمانے میں دم نہیں
ہم سے زمانہ خود ہے زمانے سے ہم نہیں

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT