Friday , September 22 2017
Home / سیاسیات / نائب صدر جمہوریہ کے انتخاب میں اپوزیشن کا امیدوار

نائب صدر جمہوریہ کے انتخاب میں اپوزیشن کا امیدوار

اتحاد برقرار رکھنے کی کوشش ‘ 11جولائی کو پارلیمنٹ کے احاطہ میں صدر کانگریس سونیا گاندھی کی زیر صدارت اجلاس
نئی دہلی ۔ 9جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) امکان ہے کہ اپوزیشن نائب صدر جمہوریہ کے انتخابات میں اپنا ایک مشترکہ امیدوار کھڑا کرے گا ۔ نام کے بارے میں فیصلہ ہنوز نہیں کیا گیا ہے ۔ 11جولائی کو پارلیمنٹ کے احاطہ میں آئندہ لائحہ عمل طئے کرنے کیلئے اپوزیشن کا ایک اجلاس مقرر ہے ۔ ذرائع کے بموجب غیر این ڈی اے پارٹیاں کوشش کررہی ہے کہ اپوزیشن کا اتحاد بلارکاوٹ برقرار رہے ۔ اپوزیشن کا احساس ہے کہ اگر وہ انتخابات میں ناکام بھی رہتی ہے تو وہ مایوس نہیں ہوگی ۔ نائب صدر کے عہدہ کیلئے مقابلہ میں برسراقتدار پارٹی کا بہت کچھ داؤ پر لگا ہوا ہے کیونکہ اسے پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں کی 790 نشستوں میں سے تقریباً 550نشستیں حاصل ہیں ۔ ان میں نائب صدر جمہوریہ کے انتخاب کیلئے الکٹورل کالج بھی شامل ہے ۔ الکٹورل کالج جو نائب صدر جمہوریہ کے انتخابات میں اپنی رائے ظاہر کرے گا جو راجیہ سبھا کے بااعتبار عہدہ صدرنشین بھی ہوتے ہیں ۔ 543 منتخبہ اور 2نامزد لوک سبھا کے ارکان کے علاوہ راجیہ سبھا کے 233 منتخب ارکان اور 12 نامزد ارکان پر مشتمل ہوتا ہے ۔ 18 غیر این ڈی اے پارٹیاں توقع ہے کہ صدر کانگریس سونیا گاندھی کی زیر صدارت پارلیمنٹ کی لائبریری میں اپنا اجلاس منعقد کریں گی ۔ پارٹی کے نائب صدر راہول گاندھی دیگر پارٹیوں کے جیسے کے این سی پی ‘ آر جے ڈی ‘ بایاں بازو ‘ ترنمول کانگریس ‘ سماج وادی پارٹی ‘ بہوجن سماج پارٹی ‘ ڈی ایم کے اور دیگر چھوٹی پارٹیوں کے میزبان ہوں گے جو اجلاس میں شرکت کریں گی۔

امکان ہے کہ پارٹیاں ایوان پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس کے بارے میں اپنی حکمت عملی کا بھی تعین کریں گی ۔ پارلیمنٹ کا مانسون اجلاس 17جولائی سے شروع ہورہا ہے ۔ آر جے ڈی کے سربراہ لالو پرساد یادو کے ارکان خاندان کی قیامگاہوں پر سی بی آئی دھاؤں کے پیش نظر اس اجلاس کی اہمیت میں اضافہ ہوگیا ہے ۔ یہ نظریات کی جنگ ہے ۔ یہ ایک ایسا انتخاب ہے جس میں اپوزیشن کو مقابلہ کرنا ہی ہوگا اور امکان ہے کہ وہ یقینا مقابلہ کریں گے ۔ ذرائع کے بموجب حالانکہ کسی نام پر ہنوز تبادلہ خیال نہیںکیا گیا لیکن بعض نام سنے جارہے ہیں جو صدارتی انتخاب نائب صدر جمہوریہ کے عہدہ کیلئے انتخابات کے علاوہ اہمیت رکھتے ہیں ۔ جو نام سنے جارہے ہیں ان میں گوپال کرشن گاندھی اور پرکاش امبیڈکر کے نام ہیں جنہیں نائب صدر جمہوریہ کے انتخابات میں اپوزیشن کا امیدوار ہونا زیرغور ہے ۔ ہر پارٹی سے خواہش کی گئی ہے کہ اجلاس میں وہ اپنی تجاویز پیش کرے ۔ امکان ہے کہ اپوزیشن اس اجلاس میں ہی آئندہ انتخابات کیلئے اپنے امیدوار کا فیصلہ کرے گا ۔ ذرائع کے بموجب غیر رسمی تبادلہ خیال بعض اپوزیشن قائدین کے ساتھ منگل کے اجلاس میں ہوچکا ہے ۔ سی پی آئی کے قومی سکریٹری ڈی راجہ کے بموجب تاحال کسی نے بھی کانگریس کی جانب سے یا کسی اور سیاسی پارٹی کی جانب سے کسی امیدوار کا نام تجویز نہیںکیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT