Monday , August 21 2017
Home / Top Stories / نائب صدر کیلئے گوپال کرشن گاندھی اپوزیشن کے مشترکہ امیدوار

نائب صدر کیلئے گوپال کرشن گاندھی اپوزیشن کے مشترکہ امیدوار

بشمول جے ڈی (یو) 18 اپوزیشن جماعتوں کے اجلاس میں فیصلہ کے بعد سونیا گاندھی کا اعلان

نئی دہلی 11 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) کانگریس کی صدر سونیا گاندھی نے کہا ہے کہ 18 اپوزیشن جماعتوں نے مغربی بنگال کے سابق گورنر گوپال کرشنا گاندھی کو نائب صدرجمہوریہ کے عہدہ کے لئے اپنے مشترکہ امیدوار کی حیثیت سے انتخاب کیا ہے۔ گوپال کرشن گاندھی کے نام کو تمام 18 اپوزیشن جماعتوں نے منظوری دی ہے جن میں جے ڈی (یو) بھی شامل ہے جو اپوزیشن سے الگ موقف اختیار کرتے ہوئے صدارتی انتخابات میں این ڈی اے کے امیدوار رام ناتھ کووند کی تائید کررہی ہے۔ کانگریس کی صدر سونیا گاندھی نے اجلاس کے بعد کہاکہ ’’18 اپوزیشن جماعتوں کے قائدین نے نائب صدارتی امیدوار کا متفقہ انتخاب کیا ہے اور تمام نے گوپال کرشن گاندھی کو اپنے مشترکہ امیدوار کی حیثیت سے نامزد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ہم اُن (گوپال کرشن گاندھی) سے بات کرچکے ہیں جس کے بعد اُنھوں نے نائب صدرجمہوریہ ہند کے عہدہ کے لئے اپوزیشن کا مشترکہ امیدوار بننے سے اتفاق کرلیا ہے‘‘۔ تمام اپوزیشن قائدین کی طرف سے گوپال کرشن کو متفقہ طور پر اس عہدہ کے لئے امیدوار بنانے کے بعد کانگریس کے سینئر لیڈر غلام نبی آزاد، ترنمول کانگریس کے ڈیرک اوبرائین اور سی پی آئی (ایم) کے سیتارام یچوری نے بھی گوپال کرشن گاندھی سے ان کی رضامندی کے حصول کے لئے ٹیلی فون پر بات چیت کی۔ سونیا گاندھی نے کہاکہ ’’اُنھوں (گوپال کرشن) نے درحقیقت ان کی امیدواری پر فیصلہ کیلئے اجلاس میں شرکت کرنے والے تمام قائدین سے ممنونیت کا اظہار کیا ہے‘‘۔ ذرائع نے کہاکہ اپوزیشن قائدین نے صرف 15 منٹ میں گوپال کرشن گاندھی کے نام پر فیصلہ کرلیا۔ ان کے صرف ایک ہی نام پر تبادلہ خیال کیا گیا اور اس کی متفقہ طور پر تائید کی گئی۔ یچوری نے کہاکہ گوپال گاندھی جو مہاتما گاندھی کے پوترے اور ہندوستان کے آخری گورنر جنرل سی راج گوپال چاری کے نواسہ ہیں، نائب صدر کے عہدہ کے لئے ان سے بہتر اور کوئی امیدوار نہیں ہوسکتا۔ ’’ہم توقع کرتے ہیں کہ اُن کا متفقہ انتخاب کیا جائے گا‘‘۔ ٹی ایم سی کے اوبرائین نے سب سے پہلے گاندھی کا نام تجویز کیا۔ ان کے بعد بی ایس پی کے ستیش مشرا اور سی پی آئی (ایم) کے سیتارام یچوری نے حمایت کی۔ بعدازاں تمام قائدین نے اتفاق کرلیا۔ نائب صدرجمہوریہ کے عہدہ کے لئے 5 اگسٹ کو رائے دہی ہوگی اور اسی شام ووٹوں کی گنتی کے بعد نتیجہ کا اعلان کیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT