Tuesday , May 30 2017
Home / اضلاع کی خبریں / نارائن پیٹ میں آبرسانی کا مسئلہ سنگین

نارائن پیٹ میں آبرسانی کا مسئلہ سنگین

بلدیہ کی جانب سے 10 دنوں میں ایک مرتبہ نلوں سے پانی کی سربراہی

نارائن پیٹ۔ 14 مارچ (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) نارائن پیٹ میں پینے کے پانی کی شدید قلت پیدا ہوگئی ہے۔ بعض محلہ جات میں بلدیہ کی جانب سے 10 دن میں ایک مرتبہ نلوں کے ذریعہ پانی سربراہ کیا جارہا ہے۔ تمام ذخائر آب بشمول بورویل خشک ہوگئے ہیں۔ زیرزمین پانی مزید گہرائی میں جاچکا ہے۔ خانگی ٹینکروں کی جو پانی سربراہ کررہے ہیں، کی چاندی ہوگئی ہے۔ ایک ہزار لیٹر پانی کی مقدار 150 روپئے میں فروخت ہورہا ہے۔ موسم گرما کے آغاز میں ہی پانی کی قلت کو دیکھتے ہوئے عوام میں شدید گرما کے موسم کے متعلق سوچ کر خوف و گھبراہٹ محسوس کررہے ہیں۔ بلدیہ میں ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کیلئے کوئی منصوبہ تیار کرتی ہوئی نظر نہیں آرہی ہے۔ گزشتہ سال بلدیہ نے تمام محلہ جات میں ٹینکروں کے ذریعہ پانی کی سربراہی کی کوشش کی تھی مگر اس سال تاحال اس کا آغاز نہیں ہوا ہے۔ شہر کے محلہ جات لعل مسجد، کمہارواڑی، آر ٹی سی کالونی، بی سی کالونی، ٹیچرس کالونی، باپو نگر، بھیونڈی کالونی شدید متاثرہ علاقے مانے جارہے ہیں۔ 8 یا 10 دن میں نلوں کے ذریعہ چھوڑے جانے والے پانی کے انتظار میں عوامی نلوں کے پاس گھڑوں کی طویل قطاریں دیکھی جارہی ہیں۔ عوام کا مطالبہ ہے کہ حکومت عوام کی بنیادی ضرورت پینے کے پانی کی سربراہی کیلئے عملی اقدامات عمل میں لائے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT