Tuesday , August 22 2017
Home / ہندوستان / ناسک میں عام حالات بحال

ناسک میں عام حالات بحال

سنگ باری اور آتشزنی میں ملوث افراد گرفتار

ناسک۔10 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) علاقہ ترمباکیشور میں ایک نابالغ لڑکے کی جانب سے ایک 5 سالہ لڑکی کی عصمت ریزی کی کوشش کے واقعہ پر ضلع کے مختلف مقامات پر پرتشدد احتجاج کے ایک دن بعد آج صورتحال معمول پر آگئی اور آج کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا۔ پولیس نے بتایا کہ احتجاج کے سلسلہ میں بعض افراد کو حراست میں لے لیا گیا۔ موضع تلیگائوں میں ایک سنسان مقام پر ہفتہ کی شب ایک 16 سالہ لڑکے نے کمسن لڑکی کی عصمت ریزی کی کوشش کی تھی اس واقعہ کی اطلاع پر ضلع کے مختلف مقامات پر کشیدگی پھیل گئی بعدازاں برہم دیہاتیوں نے اہم سڑکوں بشمول ممبئی۔آگرہ قومی شاہراہ پر راستہ روکو احتجاج کیا جس کے دوران ایک آر ٹی سی بس کو نذرآتش اور دیگر گاڑیوں بشمول پولیس کی گاڑیوں کو نقصان پہنچایا گیا۔ بگڑتے ہوئے حالات کے پیش نظر چیف منسٹر دیویندر فڈنویس نے عوام سے پرسکون رہنے کی اپیل کی اور ایک کیس ، فاسٹ ٹریک کورٹ میں پیش کرنے کا تیقن دیا ہے جبکہ بڑے پیمانے پر احتجاج کے بعد حساس مقامات پر پولیس کی بھاری جمعیت تعین کردی گئی ہے۔ ناسک ضلع کے سپرنٹنڈنٹ پولیس (رورل) مسٹر انکش شنڈے نے بتایا کہ صورتحال قابو میں ہے اور آج کسی بھی علاقہ سے ناخوشگوار واقعہ کی اطلاع نہیں ہے۔ انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ سماجی میڈیا پر پھیلائی جانے والی افواہوں پر توجہ نہ دیں۔ عام حالات بحال کرنے میں پولیس کا تعاون کریں۔ ضلع ایس پی نے بتایا کہ سنگباری اور آتشزنی کے واقعتا میں ملوث بعض افراد کو حراست میں لے لیا گیا ہے جبکہ ممبئی۔آگرہ قومی شاہراہ پر ٹریفک بحال کردی گئی ہے۔ اگرچہ کہ آج بھی بعض لوگوں نے راستہ روکو احتجاج کی کوشش کی لیکن پولیس نے افہام تفہیم کے ذریعہ انہیں باز رکھا۔ ناسک شہر میں آج بعض اسکولوں کو احتیاطی اقدامات کے طور پر تعطیل کا اعلان کیا گیا اور جو اسکولس کھلے تھے وہاں پر حاضری کم دیکھی گئی۔ دریں اثناء پولیس نے آج تشدد سے متاثرہ شہر ناسک میں دو دن تک کے لئے موبائیل انٹرنیٹ اور بھاری مقدار میں ایس ایم ایس بھیجنے پر پابندی عائد کردی ہے تاکہ افواہوں اور اشتعال انگیزی پیامات کی رسائی پر قابو پایا جاسکے جبکہ حکومت مہاراشٹرا نے بتایا کہ اندرون 15 یوم اشرار کے خلاف کیس دائر کردیا جائیگا۔

TOPPOPULARRECENT