Sunday , May 28 2017
Home / شہر کی خبریں / نالوں پر قبضوں کو مکمل برخاست کرنے کے اقدامات

نالوں پر قبضوں کو مکمل برخاست کرنے کے اقدامات

سروے رپورٹ حکومت کو پیش کردی گئی ، ہزارہا مقامات پر قبضہ جات کی نشاندہی
حیدرآباد۔17فروری(سیاست نیوز) نالوں پر موجود ناجائز قبضوں کی برخواستگی کا فیصلہ حکومت کے اختیار میں ہے حکومت کی جانب سے نالوں پر موجود غیر مجاز تعمیرات کو ہٹانے کی ہدایت جاری کئے جانے کے بعد مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کی جانب سے نالوں پر کئے گئے قبضوں کو مکمل برخواست کرنے کے اقدامات کئے جائیں گے۔ جی ایچ ایم سی سے تعلق رکھنے والے ایک اعلی عہدیدار نے یہ بات بتائی ۔ انہوں نے نالوں پر قبضہ ٔ جات کے متعلق سروے کی تکمیل پر آئندہ کی کاروائی کے متعلق پوچھے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے یہ بات کہی اور کہا کہ ریاستی حکومت کو رپورٹ روانہ کردی گئی ہے اور رپورٹ پر حکومت کیا کاروائی کرتی ہے اس کی بنیاد پر ہی آئندہ کی حکمت عملی تیار کی جائے گی۔ گذشتہ برس بارش کے سبب پیدا شدہ صورتحال کے دوران اس بات کا انکشاف ہوا تھا کہ شہر میں موجود برساتی نالوں کے علاوہ پانے کے بہاؤ کے راستوں پر غیر مجاز تعمیرات کے سبب پانی جمع ہوا ہے اور بارش کے پانی کے گھروں میں داخل ہونے کی شکایات موصول ہوئی ہیں۔ ان حالات کو دیکھنے کے بعد ریاستی حکومت نے مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کے حدود میں موجود تمام نالوں کا مکمل سروے کرتے ہوئے رپورٹ پیش کرنے کے لئے مختلف محکمہ جات پر مشتمل کمیٹی تشکیل دی اور کمیٹی میں شامل عہدیداروں نے گذشتہ یوم رپورٹ حوالہ کردی ہے جس میں 12ہزار 182ناجائز قبضہ جات کی نشاندہی کی گئی ہے جو کہ شہر کے بڑے نالوں پر کئے گئے ہیں۔ رپورٹ کے مطابق نارتھ زون میں 4030قبضہ جات ہیں جو37بڑے نالوں پرکئے گئیہیں۔ 2809تعمیرات سنٹرل زون میں نشاندہی کی گئی ہیں جو39 نالوں پر کی گئی ہیں۔ ویسٹ زون میں 41 نالوں پر 2684قبضہ جات کی نشاندہی کی گئی ہے۔ ساؤتھ زون میں 32بڑے نالوں کے سروے میں اس بات کا انکشاف ہوا ہے کہ 1810قبضہ جات ہیں اسی طرح ایسٹ زون میں کمیٹی نے 849ناجائز تعمیرات کی نشاندہی کی ہے جو 24بڑے نالوں پر کی گئی ہیں۔عہدیداروں نے بتایاکہ جملہ 173 نالوں کا مکمل سروے کرنے پر اس بات کا انکشاف ہوا ہے۔ بتایاجاتا ہے کہ حکومت اس رپورٹ کا جائزہ لینے کے ساتھ ساتھ کرلوسکر کمیٹی رپورٹ کا بھی جائزہ لے گی تاکہ اس بات کا اندازہ لگایا جا سکے کہ اس رپورٹ میں کرلوسکر کمیٹی کی نشاندہی کردہ غیر مجاز تعمیرات و قبضہ جات کا تذکرہ موجود ہے یا نہیں ! کمشنر مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآبادڈاکٹر بی جناردھن ریڈی نے بتایا کہ جملہ 390کیلو میٹر نالو ں کے سروے کے بعد سرکاری احکام کا انتظار کیا جا رہاہے کہ کس طرح ان ناجائز قبضہ جات کی برخواستگی کو عمل میں لایا جائے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT