Wednesday , September 20 2017
Home / Top Stories / ’ناکام شہزادہ ‘ راہول کی اب ملک میں کوئی نہیں سُن رہا : بی جے پی

’ناکام شہزادہ ‘ راہول کی اب ملک میں کوئی نہیں سُن رہا : بی جے پی

نئی دہلی ۔ 12 ستمبر ۔(سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی نے آج راہول گاندھی کو ’’ناکام شہزادہ ‘‘ اور ناکام سیاستداں قرار دیتے ہوئے اُنھیں شدید تنقید کا نشانہ بنایا جس کا پس منظر نائب صدر کانگریس کے وہ ریمارکس ہیں جس میں انھوں نے امریکہ کے ایک جلسہ عام کے دوران موروثی سیاست کی مدافعت کی ۔ راہول کی تقریر کے اندرون چند گھنٹے مرکزی وزیر سمرتی ایرانی نے پریس کانفرنس میں اُن پر سخت نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ اُن کا یہ اعتراف کہ کانگریس 2012ء کے بعد سے خود سر ہوگئی ، ’’بڑا سیاسی اعتراف‘‘ ہے اور سونیا گاندھی کے رویہ کا عکاس بھی ہے جو بدستور اس کی صدر ہیں۔ سمرتی نے بی جے پی پریس کانفرنس میں کہا کہ آج ایک ناکام شہزادے نے اپنے ناکام سیاسی سفر کے بارے میں امریکہ میں لب کشائی کی ہے ۔ لیکن ملک (ہندوستان ) اُن کی کچھ نہیں سُن رہا ہے اس لئے وہ کہیں اور جاکر بول رہے ہیں۔ یہ ضرور پہلی مرتبہ ہونا چاہئے کہ کسی نائب صدر کانگریس نے اپنے صدر پارٹی پر نکتہ چینی کی اور پارٹی کا کام ہے کہ اس بارے میں احتساب کرے ۔ برکلی کی یونیورسٹی آف کیلفورنیا میں اسٹوڈنٹس سے اپنے خطاب میں راہول نے وزیراعظم نریندر مودی کو بھی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے اُن پر انتشارپسند سیاست چلانے اور ہندوستان کی معیشت کو بھاری نقصان پہنچانے کا الزام عائد کیا، جس کیلئے انھوں نے حکومت کے بعض بے تکے اور خطرناک فیصلے جیسے نوٹ بندی اور جی ایس ٹی کا حوالہ دیا ۔ سمرتی نے کہاکہ راہول گاندھی نے وزیراعظم کی اہمیت گھٹانے اور اُنھیں کم تر ثابت کرنے کی کوشش کی جس پر کوئی تعجب نہیں کیونکہ اُن سے یہی توقع تھی ۔ لیکن یہ اُن کی ناکام حکمت عملی کا اشارہ بھی ہے ۔ اُس ملک کے عوام جہاں وہ سیاسی پارٹی کی قیادت کرتے ہیں اب اُن کی تائید و حمایت نہیں کررہے ہیں ، اس لئے وہ اپنے دکھ کا اظہار بیرون ملک کررہے ہیں۔ مرکزی وزیر نے کانگریس لیڈر کو چیلنج بھی کیا کہ مودی حکومت پر اُن کی تنقید کے بارے میں وہ تحریری تیاری کے بغیر عوامی مباحثہ میں حصہ لیں ۔ سمرتی جنھیں گزشتہ لوک سبھا چناؤ میں حلقہ امیٹھی میں راہول کے مقابل ناکام ہوئی ، انھیں اگلے الیکشن میں بھی بی جے پی کی امیدوار کے طورپر دیکھا جارہا ہے ۔ انھوں نے کہا کہ کانگریس لیڈر کو امریکی کالج سہولت کا مقام معلوم ہوا اور اُنھوں نے اپنے دل کی بھڑاس نکالی ہے ۔ سمرتی نے موروثی سیاست کیخلاف صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند و دیگر کی مثالیں پیش کی۔

TOPPOPULARRECENT