Monday , October 23 2017
Home / Top Stories / ناگا باغیوں کیساتھ قطعی معاہدہ سے قبل منی پور کے مفادات کا تحفظ

ناگا باغیوں کیساتھ قطعی معاہدہ سے قبل منی پور کے مفادات کا تحفظ

Kolkata, India May26 2015; Union Home Minister Rajnath Singh Rally in North Kolkata India on Tuesday May 26. 2015 ; (Photo-By SubhankarChakraborty/ Hindustan Times)

معاہدہ میں صرف خاکہ پیش کیا گیا، ریاستی چیف منسٹر کو مرکزی وزیرداخلہ راجناتھ سنگھ کا تیقن

نئی دہلی 8 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) مرکز نے آج ریاست منی پور کو تیقن دیا ہے کہ اس کے مفادات کا مکمل تحفظ کیا جائے گا جب ناگا عسکریت پسند تنظیم NSCN-IM کے ساتھ قطعی معاہدہ پر دستخط کئے جائیں گے۔ مرکزی وزیرداخلہ راجناتھ سنگھ نے آج چیف منسٹر ایبوبی سنگھ سے  ملاقات کے موقع پر یہ پیام دیا۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ وزیرداخلہ نے شمال مشرقی ریاستوں کے جغرافیائی تبدیلی پر اندیشوں کا ازالہ کرتے ہوئے علاقہ کے چیف منسٹرس کو تیقن دیا کہ این ایس سی این ۔ آئی ایم کے ساتھ قطعی معاہدہ پر دستخط سے قبل ان سے بھی مشاورت کی جائے گی۔ راجناتھ سنگھ نے ایبوبی سنگھ سے کہاکہ مرکزی حکومت نے عسکریت پسند تنظیم سے یہ واضح کردیا ہے کہ ناگا اکثریتی علاقوں کو متحد کرنے کے لئے ان کے اصل مطالبہ کی تکمیل نہیں کی جاسکتی۔ البتہ خود مختار کونسلوں کے خطوط پر مجالس مقامی کو مزید اختیارات تفویض کئے جائیں گے۔ واضح رہے کہ چیف منسٹر منی پور نے آسام اور اروناچل پردیش کے اپنے ہم منصبوں کے ساتھ اس بات پر احتجاج کیا تھا کہ گزشتہ پیر کے دن NSCN-IM کے ساتھ ابتدائی معاہدہ پر دستخط سے قبل ناگا لینڈ کے پڑوسی ریاستوں سے مشاورت نہیں کی گئی۔ عسکریت پسند تنظیم نے چند سال قبل خود مختاری سے متعلق اصل مطالبہ سے دستبرداری اختیار کرلی تھی۔ اور یہ اصرار کیا ہے کہ منی پور، اروناچل پردیش اور آسام میں ان علاقوں کو باہم مربوط کردیا جائے جہاں پر ناگا نسل کے لوگوں کی اکثریت ہے۔ لیکن مذکورہ ریاستوں نے اس مطالبہ کی شدید مخالفت کی تھی۔ ذرائع نے بتایا کہ وزیرداخلہ نے چیف منسٹر منی پور سے یہ وضاحت کی کہ گزشتہ پیر کو قطعیت دیئے گئے معاہدہ میں صرف فریم ورک (خاکہ) پیش کیا گیا اور آئندہ چند ماہ میں تفصیلی مباحث کے بعد قطعی معاہدہ پر دستخط کئے جائیں گے۔

TOPPOPULARRECENT