Sunday , October 22 2017
Home / ہندوستان / ناگپور میں سلیم شاہ کے قبضہ سے بیف پایا گیا : فارنسک رپورٹ

ناگپور میں سلیم شاہ کے قبضہ سے بیف پایا گیا : فارنسک رپورٹ

گاؤ دہشت گردوں کی زدوکوب سے متاثر ہ بی جے پی ورکر برطرف
ناگپور۔16جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) پولیس نے کہا ہے کہ مہاراشٹرا کے ضلع ناگپور میں چار دن قبل گاو رکھشکوں کے ہاتھوں پٹائی کا نشانہ بننے والا ایک مسلم شخص جس کا بی جے پی سے تعلق ہے ‘ بیف لے جارہا تھا ۔ بی جے پی کی یونٹ سے وابستہ 34سالہ سلیم شاہ کو 12جولائی کو بہیمانہ طور پر زدوکوب کرنے والے چار افراد کو گرفتار کرلیا گیا ۔ سلیم کی جانب سے منتقل کیا جانے والا گوشت بغرض معائنہ فارنسک لیباریٹری بھیجا گیا تھا ۔ ناگپور رورل پولیس سپرنٹنڈنٹ سلیش باکواڈے نے پی ٹی آئی سے کہا کہ لیباریٹری کی رپورٹ مثبت بتائی گئی ہے جس کا مطلب مذکورہ گوشت بیف ہی تھا ۔ انہوں نے کہا کہ سلیم کے خلاف پولیس مزید قانونی کارروائی کرے گی ۔ اس دوران بی جے پی کی ناگپور یونٹ کے صدر راجیہ پوندار رپورٹ کے انکشاف پر صدمہ کا اظہار کیا ہے ۔ پوندار نے کہا کہ شاہ کے خلاف قانون کے مطابق سخت کارروائی کی جائے گی لیکن اس قسم کے واقعات میں عوام کو چاہیئے کہ وہ قانون اپنے ہاتھ میں نہ لیں اور تشدد پرآمادہ نہ ہوں ۔ سلیم شاہ کی ماں کا دعویٰ ہے کہ وہ کاٹول بی جے پی یونٹ میں اقلیتی مورچہ کا صدر تھا لیکن مقامی بی جے پی کے قائدین نے کہا کہ وہ صرف پارٹی کا رکن ہے ۔ سلیم شاہ کی گاؤ دہشت گردوں کے ہاتھوں زدوکوب کے واقعہ پر حکمراں بی جے پی کی حلیف شیوسینا کے علاوہ اپوزیشن کانگریس اور این سی پی نے بھی مذمت کی ہے ۔ کاٹول کا ساکن سلیم شاہ 12جولائی کو موٹر سیکل پر گھر واپس ہورہا تھا کہ پانچ یا چھ افراد نے بھارسنگی گاؤں میں بس اسٹاپ کے قریب اس کو روک لیا اور بیف لے جانے کے شبہ پر بری طرح زدوکوب کیا ۔ اس واقعہ کے ضمن میں چار افراد 35سالہ اشوین اوئیکے ‘ 42سالہ رامیشور تائیواڈے ‘ 36سالہ موریشور تانڈورکر اور 25سالہ جگدیش چودھری کو گرفتار کرتے ہوئے ان کے خلاف ہندوستانی تعزیری ضابطہ کی دفعہ 326 کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT