Saturday , August 19 2017
Home / شہر کی خبریں / نبی کریم ؐ کے اخلاق و اقدار کے اعلیٰ صفات دوسروں تک پہنچانے کی تلقین

نبی کریم ؐ کے اخلاق و اقدار کے اعلیٰ صفات دوسروں تک پہنچانے کی تلقین

مسلمان اسلامی تعلیمات پر آنچ آنے نہیں دینگے ۔ تعمیر ملت کا جلسہ رحمتہ للعالمینؐ۔ مولانا محمود مدنی و دیگر کا خطاب
حیدرآباد ۔ 13 ۔ دسمبر : ( سیاست نیوز ) : آنحضور ﷺ کو اللہ تعالیٰ نے اپنا برگزیدہ نبی و رسل بنادیا اور آپؐ کے کاندھوں پر بھاری ذمہ داری کا بوجھ ڈالا جس کی وجہ سے آپ پر کپکپی طاری ہوگئی ۔ اگر اللہ رب العزت چاہتے تو کار نبوت کے اس اہم وجلیل کام کو فرشتوں کے ذریعہ لیتے مگر اللہ نے رسولوں کے بعد اس ذمہ داری کو (دین اسلام ) کو دوسروں تک پہنچانے کی تاکید کی ۔ نبی کریم ؐ نے اخلاق و اقدار کے اعلیٰ صفات چھوڑے ہیں انہیں دوسروں تک منتقل کریں ۔ اس لیے آپؐ کی آمد کے ذریعہ انسانیت کی ہدایت کے ساتھ اسلام کے نظام حیات کو دنیا تک پہنچانا مقصود تھا ۔ کار نبوت کی یہ ذمہ داری آپؐ پر ایمان لاکر اس پر ثابت قدم جمے رہنے والوں پر ڈالی کہ سماج و معاشرے میں پھیلائی جانے والی برائیوں کو دور کریں ۔ اس لیے کہ اگر ایک انسان میں سدھار آئے گا تو سماج میں سدھار آئے گا اور اس سے یکسر زمانہ میں تبدیلی واقع ہوگی ۔ ان خیالات کا اظہار حضرت مولانا سید محمود اسعد مدنی معتمد عمومی جمعیتہ العلماء ہند نے کل ہند مجلس تعمیر ملت کے زیر اہتمام 67 ویں یوم رحمتہ للعالمینؐ سے کیا ۔ جو 12 دسمبر کی صبح نظام کالج گراونڈ پر منعقد ہوا ۔ نگرانی جناب جلیل احمد ایڈوکیٹ صدر مجلس تعمیر ملت نے کی ۔ مولانا مدنی نے کہا 12 ربیع الاول حضور کی ولادت کا یوم ہے اس مناسبت سے مسلمان اس بات کا عہد کریں کہ وہ اپنی باقی زندگی کو اسلام اور رسول عربیؐ کی تعلیمات کی روشنی میں بسر کریں گے ۔ اس لیے کہ اگر زمانہ میں بدلاؤ اور سماج و معاشرہ کو اصلاح کرنی ہو تو جنگ و جدال کی ضرورت نہیں اور نہ حالات پر کوئی گلہ و شکوہ کرنا ہے بلکہ اب حالت یہ ہے کہ ہندوستان ہی نہیں بلکہ مسلمان دنیا کے کسی خطہ میں جائیں تو وہاں اس کی عزت اور ناموس کی کوئی حفاظت دیکھنے کو نہیں ملتی ۔ انہوں نے کہا کہ وقفہ وقفہ سے ملک میں شریعت میں مداخلت کی سازش ایک سونچے سمجھے منصوبے کے تحت کی جارہی ہے ۔ لیکن ہمارا ایمان ہے کہ مسلمان اسلامی تعلیمات پر کوئی آنچ آنے نہیں دیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ والدین کی ذمہ داری ہے کہ وہ اپنے لڑکوں اور لڑکیوں کی اصلاح کی طرف توجہ دیں ۔ انہوں نے کہا کہ کتنی ہی لڑکیاں آج گھروں میں بن بیاہی بیٹھی ہیں ان کا قصور اس کے سوا کچھ نہیں کہ والدین لڑکے والوں کی مانگوں کو پورا نہیں کرسکتے ۔ پروفیسر اختر الواسع وائس چانسلر مولانا آزاد یونیورسٹی جودھپور نے کہا کہ آپؐ کی تعلیمات سے بنی نوع انسانی کو متعارف کروانے کی شدید ضرورت ہے آپ پر کار نبوت کا وہ بھاری بوجھ ڈالا گیا اور آپؐ کو اس وقت اقراء کی تعلیم دی گئی اس اہم پیغام کو آپؐ لانے کے باوجود یہ بات کہنی پڑرہی ہے کہ آپ کے ماننے والوں کی بڑی تعداد تعلیم سے دوری اختیار کیے ہوئے ہے ۔ ضرورت ہے کہ اس امت میں ہر ایک کو عالم کے ساتھ دنیا کا معلم ہونا چاہئے ۔ مولانا قمر احمد اشرفی ناظم اعلی کچھوچوی ( اترپردیش ) نے کہا کہ آپؐ کی پیدائش کے بعد دنیا ایک نئی کروٹ لی جبکہ دنیا کے بہت مذاہب جو ایک چیلنجس کے ساتھ آئے وہ اپنی ساکھ بچا نہ سکے ۔ آپؐ کی آمد کے بعد دنیا میں اصلاحی کام شروع ہوئے ۔ نواب احمد عالم خاں نے خطبہ استقبالیہ پڑھا ۔ ڈاکٹر حافظ احسن بن محمد الحمومی نے کہا کہ جس مالک نے ہمیں پیدا کیا اور اس دنیا کو وجود بخشا وہ جانتا تھا کہ دنیا کے کن کن مقام پر انبیاء و رسل کو بھیجا جائے وہاں بھیجا گیا اور جہاں یہ انبیاء علیہ السلام پہنچے وہاں انہوں نے کار نبوت کا حق ادا کیا ۔ آپ کی دعوت عام ہوئی تو دنیا کے کونے کونے سے وفد آکر ملاقات کیا کرتے اور ایسی صفت و جوہر کے ساتھ اللہ نے بھیجا جس کی ضرورت کائنات کو تھی ۔ قاری محمد عظیم الدین کی قرات کلام پاک سے جلسہ کا آغاز ہوا ۔ تشکیل انور رزاقی ، شاہ نواز ہاشمی ، ڈاکٹر طیب پاشاہ قادری نے نعت کا نذرانہ پیش کیا اور تحفظ شریعت پر اشعار سنائے ۔ یوم رحمتہ للعالمینﷺ کی مناسبت سے طلبا میں تقریری و تحریری مقابلہ جات منعقد کئے گئے ان میں انعامات کی تقسیم صدر مجلس تعمیر ملت کے ہاتھوں عمل میں آئی ۔ نواب احمد عالم خاں نے خطبہ استقبالیہ پڑھا اور صدر مجلس نے سوونیر کی رسم اجرائی انجام دی ۔ جناب سید جلیل احمد ایڈوکیٹ ، محمد ضیا الدین نیر ، ڈاکٹر محمد متین الدین قادری نے آپؐ کی حیات طیبہ کے مختلف گوشوں پر روشنی ڈالی ۔ جلسہ کے آغاز سے ہی مرد و خواتین کی بڑی تعداد نظام کالج گراونڈ پر جمع ہوگئی ۔ سابق وزیر محمد علی شبیر ، جسٹس ای اسمعیل ، حافظ پیر شبیر احمد سابق صدر نشین حج کمیٹی اور شہر کے مختلف مقامات سے مرد و خواتین طلباء و نوجوانوں کی کثیر تعداد دیکھی گئی ۔

TOPPOPULARRECENT