Monday , August 21 2017
Home / Top Stories / نتیش کمار یوپی میں بی جے پی کو ہرانے کوشاں

نتیش کمار یوپی میں بی جے پی کو ہرانے کوشاں

چیف منسٹر بہار ’’ووٹ کٹوا‘‘کا رول ادا کررہے ہیں، صدر بی جے پی امیت شاہ کا ریالی سے خطاب

وارنسی 2 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) اترپردیش کے عوام کو اسمبلی انتخابات میں احتیاط سے رائے دہی کا مشورہ دیتے ہوئے بی جے پی کے صدر امیت شاہ نے چیف منسٹر بہار نتیش کمار کو ووٹ کٹوا قرار دیا اور کہاکہ وہ 2017 ء میں ہونے والے اسمبلی انتخابات میں بی جے پی کو نقصان پہنچانے مقابلہ آرائی کا فیصلہ کرسکتے ہیں۔ امیت شاہ نے دعویٰ کیا کہ نتیش کمار اترپردیش میں سماج وادی پارٹی کو ایک بار پھر تشکیل حکومت کا موقع دلانے مدد کی خاطر مہم چلارہے ہیں۔ انھوں نے کہاکہ نتیش کمار ووٹ تقسیم کرکے بی جے پی کو شکست دینا چاہتے ہیں۔ امیت شاہ نے کہاکہ نتیش کمار خود پٹنہ شہر کو سنبھالنے میں ناکام ہیں جہاں جرائم میں اضافہ ہوتا جارہا ہے ایسی صورت میں وہ اترپردیش میں کیا کرسکتے ہیں۔ انھوں نے کہاکہ خود نتیش کمار یہ جانتے ہیں کہ وہ ایک بھی نشست پر کامیابی حاصل نہیں کرسکتے لیکن وہ یوپی میں مہم چلارہے ہیں۔

اُن کے جیسے لوگ یوپی میں ووٹ کٹوا کے طور پر کام کررہے ہیں۔ بی جے پی صدر نے کہاکہ وہ اترپردیش کے عوام سے اپیل کرتے ہیں کہ حق رائے دہی کا استعمال کرتے ہوئے احتیاط سے کام لیں چونکہ اس طرح کے لوگ صرف ووٹ تقسیم کرنا چاہتے ہیں۔ انھوں نے جن سوابھیمان ریالی سے خطاب کرتے ہوئے یہ بات کہی جو این ڈی اے کی حلیف جماعت اپنا دل نے منعقد کی تھی۔ یوپی میں سماج وادی پارٹی پر مجرمانہ پس منظر رکھنے والے قائدین کی حمایت کا بھی امیت شاہ نے الزام عائد کیا اور کہاکہ اکھلیش یادو کی پارٹی مختار انصاری، افضل انصاری، عتیق احمد اور اعظم خان جیسے لوگوں سے بھری پڑی ہے۔ اگر اس طرح کے قائدین کو سماج وادی پارٹی سے باہر کردیا جائے تو پارٹی خالی ہوجائے گی اور اُس میں کوئی باقی نہیں بچے گا۔ امیت شاہ نے کہاکہ قومی یکتا دل کے سماج وادی پارٹی میں انضمام کے مسئلہ پر چاچا بھتیجے (شیوپال یادو اور چیف منسٹر اکھلیش یادو) کے مابین جاری سرد جنگ کے تعلق سے اُنھوں نے کہاکہ ریاست کے عوام اِس کو بخوبی جانتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT