Thursday , September 21 2017
Home / شہر کی خبریں / نریندر مودی اور اسد اویسی فرقہ پرستی کا وائرس

نریندر مودی اور اسد اویسی فرقہ پرستی کا وائرس

بہار میں کانگریس کی انتخابی مہم ، فخر الدین صدر اقلیت ڈپارٹمنٹ کا خطاب
حیدرآباد ۔ 28 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز): صدر تلنگانہ پردیش کانگریس اقلیت ڈپارٹمنٹ مسٹر محمد خواجہ فخر الدین ، صدر مجلس اسد الدین اویسی اور وزیر اعظم نریندر مودی کو فرقہ پرستی کا وائرس قرار دیتے ہوئے کانگریس اور عظیم سیکولر اتحاد کو کامیاب بنانے کی بہار کے عوام سے اپیل کی ہے ۔ اسمبلی حلقہ کشن گنج ، بہار میں کانگریس کے امیدوار ڈاکٹر جاوید اظہر کے انتخابی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے یہ بات بتائی ۔ اس موقع پر قائد اپوزیشن راجیہ سبھا مسٹر غلام نبی آزاد سکریٹری اے آئی سی سی و رکن راجیہ سبھا مسٹر وی ہنمنت راؤ کے علاوہ تلنگانہ کانگریس کے اقلیتی قائدین محمد معراج خاں ، محمد اعجاز خاں اور فاروق پاشاہ قادری بھی موجود تھے ۔ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس اقلیت ڈپارٹمنٹ مسٹر محمد خواجہ فخر الدین نے کہا کہ کانگریس ایک سیکولر جماعت ہے جو سیکولر ووٹوں کو تقسیم ہونے سے بچانے اور فرقہ پرستوں کو شکست دینے کے لیے عظیم سیکولر اتحاد کے ساتھ مقابلہ کررہی ہے ۔ انہوں نے صدر مجلس و رکن پارلیمنٹ اسد الدین اویسی اور وزیر اعظم نریندر مودی کو فرقہ پرستی کا وائرس قرار دیتے ہوئے کہا کہ دونوں ہی قائدین ہندوؤں اور مسلمانوں میں فرقہ پرستی کازہر گھولتے ہوئے اپنی اپنی سیاسی دکان چمکا رہے ہیں ۔ انہوں نے کشن گنج کے عوام سے کہا کہ وہ بھی حیدرآباد سے تعلق رکھتے ہیں جہاں سے لوک سبھا میں اسد الدین اویسی نمائندگی کرتے ہیں لیکن پرانے شہر کی پسماندگی اور سیما انچل کی پسماندگی میں کوئی فرق نہیں ہے ۔ برسوں سے پرانے شہر پر راج کرنے والی مجلس نے پرانے شہر کی ترقی اور مسلمانوں کی پسماندگی کو دور کرنے کے لیے کوئی اقدامات نہیں کئے ۔ تلنگانہ اور آندھرا پردیش میں اقلیتوں بالخصوص مسلمانوں کی جو بھی ترقی ہوئی ہے وہ کانگریس کے دور حکومت میں ہوئی ہے ۔

 

اسد الدین اویسی سیما انچل میں جھوٹ کا ڈھول پیٹتے ہوئے عوام بالخصوص مسلمانوں کو گمراہ کررہے ہیں اور مسلمانوں کے ووٹ کو تقسیم کراتے ہوئے راست و بلراست فرقہ پرستوں کو سیاسی فائدہ پہونچا رہے ہیں ۔ مجلس پر بھروسہ کرتے ہوئے حیدرآباد پرانے شہر کے عوام پچھتا رہے ہیں وہ سیما انچل کے عوام سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ کوئی غلطی نہ کریں ۔ پرانے شہر کے عوام بنیادی سہولتوں سے محروم ہیں جذباتی نعروں سے مسلمانوں کی تقدیر نہیں بدلے گی بلکہ عملی اقدامات سے مسلمانوں کا مستقبل روشن ہوسکتا ہے ۔ وہ بحیثیت حیدرآبادی کہہ رہے ہیں ۔ مجلس قابل بھروسہ نہیں ہے ۔ مسٹر محمد خواجہ فخر الدین نے کہا کہ این ڈی اے کے دیڑھ سالہ دور حکومت میں اقلیتوں کو مختلف طریقوں سے نشانہ بنایا جارہا ہے ۔ ترقی کا نعرہ دینے والے وزیر اعظم نریندر مودی اقلیتوں بالخصوص مسلمانوں پر حملہ کرنے والے ہندوتوا طاقتوں کی حوصلہ افزائی کررہے ہیں ۔ بہار کے انتخابات سے ہی فرقہ پرست طاقتوں کا خاتمہ کرنے اور سیکولر طاقتوں کو مزید طاقتور بنانے کا وقت آگیا ہے ۔ لہذا عوام کانگریس اور عظیم سیکولر اتحاد کو بھاری اکثریت سے کامیاب بناتے ہوئے ملک کے عوام کو پیغام دیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT