Friday , August 18 2017
Home / اضلاع کی خبریں / نریندر مودی کا دورہ عوام کیلئے بے سود ، پیسہ برباد

نریندر مودی کا دورہ عوام کیلئے بے سود ، پیسہ برباد

کانگریس پارٹی کی اسکیمات کا ہی دوبارہ سنگ بنیاد، پی سی سی صدر اُتم کمار کا الزام

کریم نگر ۔ 8 اگسٹ ۔ ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز )ریاست تلنگانہ میں نریندر مودی کے دورہ سے تلنگانہ کے عوام کو کچھ فائدہ ہونے والا نہیں ہے ، ان خیالات کا اظہار ٹی پی سی سی صدر اُتم کمار ریڈی نے وینو ونکا مستقر میں ٹی پی سی سی کے باڈی سے ٹی ریڈی کے والد جتیندر ریڈی کی تعزیتی تقریب میں کیا ۔ انھوں نے صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ سابق میں کانگریس یو پی اے حکومت مرکز اور ریاست میں برسراقتدار تھی تب تعمیر کئے گئے پینے کے پانی کی اسکیم کے تحت ہی اب پانی سربراہ کیا جارہا ہے  اور ٹی آر ایس اس کو اپنا کارنامہ بتارہی ہے جو انتہائی تعجب خیز ہے ۔ ریاست  تلنگانہ میں وزیراعظم اور وزیراعلیٰ نئی اسکیمات کو پیش کرنے کا دعویٰ کرتے ہوئے عوام کو گمراہ کررہے ہیںاور سابق میں کانگریس پارٹی کے اقتدار میں سنگارینی ادارہ کے زیرانتظام شروع کیا گیا (1200) میگاواٹ برقی پلانٹ کو اپنا کارنامہ بتارہے ہیں حالانکہ اس کا 90% کام کانگریس دور حکومت میںہوچکا تھا اور اسی وقت رام گنڈم کھاد فیاکٹری کی دوبارہ کشادگی کیلئے دس کروڑ روپئے کی منظوری دیدی گئی تھی ۔ کتہ پلی منوہر آباد ریلوے لائن کے تعمیراتی کام کی یو پی اے کے اقتدار میں ہی منظوری دیدی گئی تھی ۔ آج وزیراعظم انھیں تعمیری کاموں کا سنگ بنیاد رکھ رہے ہیں اس کے علاوہ یو پی اے کے منظورہ شدہ پراجکٹوں کا انھوں نے سنگ بنیاد رکھتے ہوئے اسے اپنا ہی کارنامہ بتایا ۔ میدک ضلع کے کومئی بنڈہ میں مودی نے گائیوں کی حفاظت کے بارے میں گھن گرج تقریر کی لیکن ریاستی عوام کے استفادہ اور بہبودی کے لئے فنڈس کی منظوری کی بات نہیں کی ۔ تلنگانہ کی تعمیر کے وقت جو تیقنات اور وعدے ہائی کورٹ ، ورنگل ریلوے کو (8) فیاکٹریاں، کھمم ضلع میں فولاد کی فیاکٹری ، ملازمین کی تقسیم کے بارے میں تلنگانہ کے چیف منسٹر سے کوئی ذکر نہیں کیا۔ ریاست میں چار ہزار میگاواٹ برقی پلانٹ کے قیام کیلئے ہائیکورٹ کی تقسیم کا مطالبہ ، میدک ضلع میں گھر گھر پانی کی شروعات کی ہے ۔ دراصل وہ مولانا آزاد سوجلا شرونتی پائپ لائن کا پانی ہے اسے پہلے رام گنڈم ، پیداپلی ، کریم نگر ، ماناکنڈور ، حسن آباد اسمبلی حلقہ کے عوام کو پینے کے پانی کی فراہمی کریں۔ این ٹی پی سی جئے پور کو اگر وزیراعظم آتے تو وہاں کے حالات کا اندازہ ہوجاتا ۔ اس لئے انھیں وہاں جانے سے روکا گیا ۔ اس موقع پر کانگریس قائدین کے علاوہ سابق وزیر سریدھر بابو اور ڈی سی سی صدر کنکم مرتنجم موجود تھے ۔

 

اسکولی ویانس ڈرائیورس کا
راستہ روکو احتجاج
کریم نگر ۔ 8 اگسٹ ۔ ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز )مسائل کی فوری یکسوئی کا مطالبہ کرتے ہوئے  خانگی تعلیمی اداروں کے اسکولی بس ویانس کے ڈرائیورس نے نیم برہنہ حالت میں کلکٹریٹ سے تلنگانہ چوک تک جلوس نکالا اور راستہ روکو احتجاج منظم کیا۔ اس موقع پر اعزازی صدر گوڑی کندولا ستیم نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہڑتال کو ناکام کرنے کیلئے تعلیمی اداروں کے مالکین و منتظمین سازش کررہے ہیں ۔ ونود کمار ایم وی آئی نے سرینواس سی آئی ٹی یو قائدین کو فون کرکے پیر کو 3 بجے بات چیت کے لئے آنے کو کہا ۔ اس پروگرام میں ضلع صدر سکریٹری تاڑلا کشن داسری سرینواس و دیگرشریک تھے ۔

TOPPOPULARRECENT