Thursday , May 25 2017
Home / Top Stories / نریندر مودی کو خاندان اور گھریلو مصائب کا اندازہ نہیں

نریندر مودی کو خاندان اور گھریلو مصائب کا اندازہ نہیں

کرنسی نوٹوں کی منسوخی کا فیصلہ واپس لینے اروند کجریوال کامطالبہ
نئی دہلی۔/15نومبر،( سیاست ڈاٹ کام ) چیف منسٹر دہلی ارویند کجریوال نے آج یہ مطالبہ کیا ہے کہ کرنسی نوٹوں کی منسوخی اسکیم کی سپریم کورٹ کی زیر نگرانی تحقیقات کروائی جائے اور اسکیم کو ایک مخصوص سیاسی جماعت کیلئے فائدہ پہنچانے کیلئے پراعتماد دھوکہ قرار دیا ہے بظاہر ان کا اشارہ بی جے پی کی طرف تھا۔ کجریوال نے دہلی اسمبلی کے ایک روزہ ہنگامی اجلاس میں ایک قرار داد پیش کی جس پر عام آدمی پارٹی  ارکان کے غلبہ والے ایوان میں مباحث کئے جائیں گے اور صدر جمہوریہ پرنب مکرجی سے گذارش کی جائے گی کہ مرکز کے فیصلہ سے دستبرداری کیلئے ہدایت دی جائے۔ یہ ہنگامی اجلاس 500 روپئے اور 1000روپئے کے نوٹوں پر پابندی کے بعد رونما صورتحال پر بحث کیلئے طلب کیا گیا تھا۔ وزیر اعظم نریندر مودی کے خلاف عاپ ارکان اسمبلی کی نعرہ بازی کے دوران چیف منسٹر کجریوال نے قرارداد پیش کی تاہم شور شرابہ اور ہنگامہ آرائی کے باعث کارروائی کو 15منٹ کیلئے ملتوی کردیا گیا۔ مباحث میں حصہ لیتے ہوئے عاپ سے وابستہ اوکھلا کے رکن اسمبلی امانت اللہ خاں نے کہا کہ کرنسی نوٹوں کی منسوخی سے خاندانوں کو درپیش تکالیف اور مصائب نریندر مودی محسوس کرنے سے قاصر ہیں کیونکہ انہیں بیوی بچے نہیں ہیں۔

امانت اللہ خاں کے ریمارک پر احتجاج کرتے ہوئے اپوزیشن لیڈر وجیندر گپتا نے کجریوال کے بارے میں شخصی الزامات عائد کئے۔ جس پر حکمران جماعت کے ارکان اسمبلی مشتعل ہوگئے اور ایوان کے وسط میں آکر احتجاج شروع کردیا جس کے نتیجہ میں کارروائی کو ملتوی کردینا پڑا۔ قبل ازیں ایوان میں ان لوگوں کی یاد میں 2 منٹ کی خاموشی منائی گئی جنہوں نے رقومات حاصل کرنے کیلئے بینکوں اور اے ٹی ایمز کے باہر قطار میں ٹہرے ٹہرے فوت ہوگئے تھے۔ جس پر اعتراض کرتے ہوئے گپتا اور بی جے پی رکن اسمبلی جگدیش پردھان نے واک آؤٹ کردیا۔ کجریوال کی پیش کردہ قرارداد صدر جمہوریہ پرنب مکرجی سے گذارش کی گئی ہے کہ کرنسی نوٹوں کی جبراً منسوخی کی اسکیم سے دستبرداری کیلئے حکومت ہند کو ہدایت دیں۔ سپریم کورٹ کی زیر نگرانی اعلیٰ سطحی تحقیقات کیلئے ضروری اقدامات کئے جائیں تاکہ بلیک منی مارکٹ میں ایک مخصوص پارٹی کے ایجنٹس کو فائدہ پہنچانے کیلئے اسکم کے ذریعہ قوم کے ساتھ دھوکہ دہی کا پتہ چلایا جاسکے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT