Tuesday , October 24 2017
Home / ہندوستان / نریندر مودی کی کابینہ ‘ کروڑ پتی سیاست دانوں کا مجموعہ : رپورٹ

نریندر مودی کی کابینہ ‘ کروڑ پتی سیاست دانوں کا مجموعہ : رپورٹ

78 رکنی کابینہ میں 72 وزرا کروڑ پتی ۔ 24 کے خلاف فوجداری مقدمات ۔ 14 وزرا کی تعلیم 12 ویں سے کم
نئی دہلی 8 جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) مرکزی کابینہ امیروں کا مجموعہ ہے ۔ حالیہ توسیع کے بعد مرکزی وزارت میں کروڑ پتیوں کی تعداد 72 ہوگئی ہے جبکہ 24 وزرا ایسے ہیں جن کے خلاف فوجداری مقدمات درج ہیں۔ مرکزی کابینہ کے ارکان کی جملہ تعداد 78 ہے ۔ ایک تازہ ترین مطالعہ میں یہ بات سامنے آئی ہے ۔ گدشتہ ہفتے کابینہ میں توسیع کے ذریعہ 19 نئے وزرا کو شامل کیا گیا ۔ پانچ وزرا کو کابینہ سے علیحدہ کردیا گیا ۔ نئے شامل کردہ زرا کے اثاثہ جات کا اوسط 8.73 کروڑ روپئے ہے جس کے بعد ساری مجلس وزارت کے اوسط اثاثہ جات کی لاگت 12.94 کروڑ روپئے ہوگئی ہے ۔ دہلی سے کام کرنے والے اسوسی ایشن برائے جمہوری اصلاحات کے ایک مطالعہ میں یہ بات سامنے آئی ہے ۔ نئے وزرا میں ایم جے اکبر نے جو مدھیہ پردیش سے راجیہ سبھا کے رکن ہیں سب سے زیادہ 44.90 کروڑ کے اثاثہ جات کا انکشاف کیا ہے جبکہ دوسرے نمبر پر پی پی چودھری ہیں جنہوں نے 35.35 کروڑ کے اثاثہ جات کا اعلان کیا ہے جبکہ تیسرے پر وجئے گوئل ہیں جن کے اثاثہ جات کی مالیت 29.97 کروڑ روپئے بتائی گئی ہے ۔ یہ دونوں راجستھان سے راجیہ سبھا کے رکن ہیں۔

ایک کروڑ سے زیادہ کے اثاثہ جات رکھنے والے نئے وزرا میں رمیش جگانجی ناگی ‘ پرشوتم کھوڈا بھائی روپالہ ‘ انو پریہ سنگھ پٹیل ‘ مہیندر ناتھ ‘ فگن سنگھ کلساٹے ‘ راجین گوہین ‘ ایس ایس اہلوالیہ ‘ ارجن رام میگھوال ‘ سی آر چودھری ‘ من سکھ بھائی لکشمن بھائی منڈاویا اور کرشنا راج بھی شامل ہیں۔ اے ڈی آر کی رپورٹ کے بموجب 78 مرکزی وزرا میں سے 9 نے 30 کروڑ سے زائد کے اثاثہ جات کا انکشاف کیا ہے جن میں وزیر فینانس ارون جیٹلی کے 113 کروڑ ‘ وزیر تغذیہ ہرسمراٹ کور بادل کے 108 کروڑ اور وزیر برقی پیوش گوئل  95 کروڑ کے اثاثہ جات کے مالک ہیں۔ نئے شامل کردہ زرا میں انیل مادھو داوے جو مدھیہ پردیش سے رکن راجیہ سبھا اور اب وزیر ماحولیات ہیں سب سے کم 60.97 لاکھ روپئے کے مالک ہیں۔ چھ وزرا نے ایک کروڑ سے کم اثاثہ جات کا انکشاف کیا ہے جبکہ نئے شامل کردہ وزرا میں سات نے اپنے خلاف فوجداری مقدمات کا اعتراف کیا ہے ۔ اس طرح 78 رکنی مرکزی کابینہ میں مجرمانہ مقدمات رکھنے والے وزرا کی تعداد 24 تک پہونچ گئی ہے ۔رپورٹ ے مطابق کابینہ میں 3 وزرا ایسے ہیں جن کی عمریں 31 سال سے 40 سال کے درمیان ہے جبکہ 44 وزرا کی عمریں 41 سال سے 60 سال کے درمیان اور 31 وزرا کی عمریں 61 سال سے 80 سال کے درمیان ہیں۔ کابینہ میں نو خاتون وزرا ہیں۔ اے ڈی آر کا کہنا ہے کہ اس کا تجزیہ ان وزرا کے لوک سبھا اور راجیہ سبھا انتخابات کے موقع پر خود پیش کردہ حلفناموں کی بنیاد پر ہے ۔ 78 وزرا میں 14 وزرا نے بارہویں یا اس سے کم تعلیم حاصل کی ہے جبکہ 63 وزرا یا تو گریجویٹ ہیں یا اعلی تعلیمی قابلیت رکھتے ہیں۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT