Sunday , September 24 2017
Home / شہر کی خبریں / نظام اسٹیٹ کے تمام عازمین حج کیلئے رباط میں قیام کی سہولت

نظام اسٹیٹ کے تمام عازمین حج کیلئے رباط میں قیام کی سہولت

آئندہ دو برسوں میں انتظامات کو قطعیت دینے کی کوشش ، ڈپٹی چیف منسٹر محمود علی کا خطاب
حیدرآباد۔/19جولائی، ( سیاست نیوز) ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے کہا کہ تلنگانہ حکومت اس بات کی کوشش کررہی ہے کہ آنے والے دو برسوں میں نظام اسٹیٹ کے تمام عازمین حج کیلئے رباط میں قیام کی سہولت فراہم کی جائے تاکہ کم خرچ میں حج کی سعادت حاصل ہو۔ڈپٹی چیف منسٹر آج چو محلہ پیالیس میں عازمین حج کی رباط میں قیام سے متعلق قرعہ اندازی تقریب سے خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے بتایا کہ تلنگانہ حکومت نے رباط میں قیام سے متعلق تعطل کو ختم کرنے میں اہم رول ادا کیا اور گذشتہ برس سے رباط میں قیام کا دوبارہ آغاز ہوا ہے۔ انہوں نے ناظر رباط اور اوقاف کمیٹی نظام کی ستائش کی اور کہا کہ ان دونوں کے تعاون کے سبب صرف 5 منٹ میں اس تنازعہ کی یکسوئی کرلی گئی۔ انہوں نے بتایا کہ دورہ سعودی عرب کے دوران انہوں نے کونسل جنرل اور کونسل حج کی موجودگی میں ناظر رباط سے اس سلسلہ میں مشاورت کی اور صرف 5 منٹ میں ناظر نے نہ صرف قیام سے اتفاق کرلیا بلکہ مقررہ تعداد سے زیادہ عازمین کے قیام کو یقینی بنایا۔ انہوں نے کہا کہ ناظر کی جانب سے رباط کے تمام عازمین کو مفت طعام اور لانڈری کی سہولت فراہم کی گئی ہے جو ان کی عازمین حج کی خدمت کے جذبہ کو ظاہر کرتا ہے۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے کہا کہ تلنگانہ حکومت نظام حیدرآباد کے کارناموں کو انتہائی قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے اور چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ ہر موقع پر نظام حیدرآباد کے کارناموں کو دہراتے ہیں۔ چیف منسٹر نے نظام حیدرآباد کی مزار پر حاضری دی اور آندھرائی قائدین کے اعتراضات کو مسترد کردیا۔ محمود علی نے کہا کہ نظام حیدرآباد کے کارناموں کو فراموش نہیں کیا جاسکتا۔ تلنگانہ میں آج جو بھی ترقی، خوشحالی اور امن و امان ہے وہ نظام کی مرہون منت ہے۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ حکومت نے ہمیشہ ہی نظام حیدرآباد اور ان کے فلاحی اور ترقیاتی اقدامات کو نہ صرف قدر کی نگاہ سے دیکھا ہے بلکہ تاریخی یادگاروں کے تحفظ کے اقدامات کئے۔ انہوں نے ناظر رباط اور اوقاف کمیٹی کو مشورہ دیا کہ وہ ایک ٹیم کی طرح حاجیوں کی خدمت کریں اور آنے والے برسوں میں عازمین حج کی تعداد میں اضافہ کو یقینی بنائیں۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ ہمیشہ اس بات کو دہراتے ہیں کہ عازمین حج کی خدمت کا ثواب حج کے برابر ہے لہذا حکومت عازمین کی روانگی اور واپسی کے موقع پر بہتر سے بہتر انتظامات کررہی ہے۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے تلنگانہ حج کمیٹی اور اس کے اسپیشل آفیسر پروفیسر ایس اے شکور کی ستائش کی اور کہا کہ عازمین کی خدمت کیلئے ان کی مساعی قابل ستائش ہے۔ انہوں نے عہدیداروں سے کہا کہ وہ تنقیدوں کی پرواہ کئے بغیر اپنا کام جاری رکھیں کیونکہ اگر ارادے نیک ہوں تو کامیابی ضرور حاصل ہوتی ہے۔ محمد محمود علی نے کہا کہ ہر سال رباط میں قیام کیلئے عازمین حج کی تعداد میں اضافہ ہورہا ہے اور جاریہ سال 678 کے قیام کی اجازت حاصل ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ حکومت اس بات کی کوشش کرے گی کہ جن حیدرآبادی رباطوں کو منہدم کردیا گیا ان کے معاوضہ کے بجائے حکومت سعودی عرب سے نئی عمارتیں حاصل کی جائیں تاکہ ان میں نظام اسٹیٹ کے عازمین کی رہائش کا انتظام ہوسکے۔ اوقاف کمیٹی نظام کے ٹرسٹی فیض احمد خاں نے خیرمقدم کیا اور بتایا کہ نظام حیدرآباد نے نظام اسٹیٹ کے عازمین کی سہولت کیلئے رباط قائم کی ہیں ۔ انہوں نے ناظر رباط اور اوقاف کمیٹی کے درمیان تنازعہ کی یکسوئی کا حوالہ دیا اور کہا کہ خوشگوار انداز میں یہ معاملہ حل ہوچکا ہے۔ اسپیشل آفیسر حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور نے قرعہ اندازی کی تفصیلات بیان کی اور عازمین حج پر واضح کردیا کہ صرف منتخب عازمین کو ہی حج کمیٹی سے فی کس 47700 روپئے واپس کئے جائیں گے۔ اس کے علاوہ کوئی اگر اپنے طور پر قیام کرتا ہے تو اسے رقم واپس نہیں ہوگی۔ اس موقع پر صدرنشین اوقاف کمیٹی نواب خیر الدین خاں اور دوسرے موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT