Saturday , September 23 2017
Home / اضلاع کی خبریں / نظام آباد میں لوک عدالت 807 کیسوں کی یکسوئی

نظام آباد میں لوک عدالت 807 کیسوں کی یکسوئی

نظام آباد:13؍ نومبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)لوک عدالت میں807 کیسوں کی یکسوئی عمل میں آئی ہے ۔ ضلع جج شریمتی سوجنا نے سپریم کورٹ کے احکامات پر ضلع لیگل سرویس آفس میں لوک عدالت کا انعقاد عمل میں لایا۔ اس موقع پر مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ کیسوں کی وجہ سے فریقین آپس میں مخاصمت اختیار کرتے ہوئے ہمیشہ ایک دوسرے کے خلاف رہتے ہیں جس کی وجہ سے امن و سکون نہیں رہ رہا ہے لیکن دونوں فریقین کے درمیان صلہ کے ذریعہ کیسوں کی یکسوئی آپسی اتحاد کی وجہ سے فریقین کے علاوہ سماج کیلئے بھی نقصان ہے ۔ چھوٹے چھوٹے کیسوں کیلئے کئی دن تک عدالتوں کے چکر کاٹتے ہوئے وقت اور روپئے برباد ہورہے ہیں وقت اور روپیوں کی حفاظت کیلئے بہترین ہے۔ ایک دوسرے آپس میںصلہ عظیم کارنامہ ہے شوہر بیوی کے اختلافات، کریمنل اور سیول مقدمات لوک عدالت میںیکسوئی کرنے کی صورت میں کورٹ فیس واپس ادا کی جائے گی ۔لہذا اس سے استفادہ حاصل کریں۔ لوک عدالت کے جج نور اللہ غوری نے اس موقع پر بتایا کہ حادثات کے موقع پر معذور ہونے کی صورت میں انہیں سرٹیفکٹ کی فراہمی کیلئے متعلقہ ڈاکٹرس کو احکامات دئیے جائیں گے ۔ لیگل سرویس کے سکریٹری سیول جج ہری ناتھ نے بتایا کہ عوام کوانصاف کی فراہمی کیلئے عدلیہ کوشاں ہے۔ اس موقع پر جونیئر سیول جج کرن کمار، جونیئر سیول جج ہریتا، بار اسوسی ایشن کے صدر راما رائو کے علاوہ دیگر بھی موجود تھے ۔ لوک عدالت میں 807 کیسوں کی یکسوئی عمل میں آئی۔

TOPPOPULARRECENT